اقتصادی رابطہ کمیٹی کا پاکستان اسٹیل ملزکےتمام ملازمین کونوکری سےفارغ کرنےکافیصلہ

ویب رپورٹ : اقتصادی رابطہ کمیٹی نے پاکستان اسٹیل ملز کے تمام ملازمین کو نوکری سے فارغ کرنے کا فیصلہ کیا ہے،ملازمین کو نوکری سے فارغ کرنے کےلیے کابینہ کی منظوری درکار ہے۔

بدھ کو مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کی زیر صدارت ای سی سی کا اجلاس ختم ہوگیا۔ ای سی سی اجلاس میں پاکستان اسٹیل ملز کے تمام ملازمین فارغ کرنے کی منظوری دی گئی۔ اسٹیل ملز کے 9350 ملازمین کو ایک ماہ کے نوٹس پر فارغ کردیا جائے گا۔

پاکستان اسٹیل ملز کے ملازمین کو18 ارب روپے کا پیکج دیا جائے گا۔کم و بیش 23 لاکھ روپے فی ملازم معاوضہ دیا جائے گا۔ تاہم 250 ملازمین پلان پر عمل درآمد کیلئے 120 دن تک کام کرتے رہیں گے۔

پاکستان اسٹیل ملز پر اس وقت 585 ارب روپے کا قرضہ اور خسارہ ہے جس میں 300 ارب روپے کا خسارہ ہے۔ پاکستان اسٹیل ملز اس وقت 35 کروڑ روپے تنخواہوں کی مد میں ادا کررہا تھا۔90 کروڑ روپے ماہانہ سود کی مد میں دئیے جاتے ہیں۔ 90 کروڑ روپے کے دیگر اخراجات بھی ہیں جن میں ٹرانسپورٹ اور میڈیکل شامل ہے۔ حکومت چاہتی ہے کہ اس کی تنظیم نو کرکے نجکاری کی جائے۔