خصوصی بچوں کیلئے پشاور بورڈ آف انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن کا بڑا اقدام

پشاور: اجمل وزیر کے مطابق خصوصی بچوں کے سیکنڈری اور ہائیر سیکنڈری لیول کے آئندہ تعلیمی سیشن کے امتحانات پشاور بورڈ کے تحت منعقد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اس سے پہلے خصوصی بچوں کے امتحانات وفاقی بورڈ برائے انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن کے زیر نگرانی ہوتے تھے،

خصوصی بچوں کو تعلیم اور دیگر ضروری ٹریننگ فراہم کی جائے گی تا کہ ملک کی ترقی میں وہ اپنا کردار ادا کر سکیں،خصوصی بچوں کی فلاح و بہبود کے لیے صوبائی حکومت تمام تر وسائل بروئے کار لا رہی ہے، اس وقت تین ہزار تین سو خصوصی بچے سرکاری اداروں میں زیر تعلیم ہیں،

خصوصی بچوں کے امتحانات منعقد کرنے کے حوالے سے اسٹیرنگ کمیٹی بنا دی گئی ہے جو اس سارے عمل کی نگرانی کریں گی، صوبائی حکومت نے سرکاری سکولوں کے اساتذہ کو سایئکلوجیکل ٹریننگ دینے کا فیصلہ کیا ہے،صوبے کے 34 ہزار سکولوں میں ایک ایک ٹیچر کو محکمہ صحت کے تعاون سے سائیکلوجیکل ٹریننگ دی جائی گی،

فیصلہ کا مقصد بچوں کو نفسیاتی طور پر مضبوط بنانا اور انکو نفسیاتی دباو سے نکالنا ہے،موجودہ حالات میں یہ سود مند ثابت ہوگا، تربیت حاصل کرنے والے اساتذہ کو بچے کے نفسیات سمجھنے میں آسانی ہوگی، صوبائی وزیر تعلیم اکبر ایوب اور چیف سیکرٹری ڈاکٹر کاظم نیاز کی زیرنگرانی اس منصوبے پر تیزی سے کام جاری ہے۔