تاجروں کے مسائل ترجیحی بنیادوں پرحل کئے جائیںگے،محمودخان

پشاور(مشرق نیوز)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے کہا ہے کہ مالاکنڈڈویژن سمیت پورے صوبے میں تاجر برادری کے تمام تر مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کئے جائیں گے ۔ وہ وزیراعلیٰ ہائوس پشاورمیں ضلع ملاکنڈ سے سوات ٹریڈرز فیڈریشن کے صدر عبد الرحیم کی قیادت میں آئے تاجربرادری کے ایک وفد سے ملاقات کر رہے تھے ۔ ملاقات میں وزیر زراعت محب اﷲ،ایم پی اے و ڈیڈک چیئرمین سوات فضل حکیم خان، وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹر ی شہاب علی شاہ اور وفد کے دیگر اراکین بھی موجود تھے۔وزیراعلیٰ نے ملاکنڈ ڈویژن کی تاجر برادری کو یقین دلایا کہ صوبائی حکومت ان کے تمام تر حل طلب مسائل کے حل کیلئے سنجیدہ اقدامات اُٹھا رہی ہے ۔ تاجر برادری کو مکمل تعاون فراہم کیا جائے گا ۔ ملاکنڈ ڈویژن میں تجارت کے فروغ کیلئے چھوٹے چھوٹے انڈسٹریل زونز کا قیام یقینی بنایا جارہا ہے ۔ اُنہوںنے کہاکہ بٹ خیلہ ہسپتال کی اپ گریڈیشن ہو گئی ہے، ملاکنڈ ڈویژن میں ویمن یونیورسٹی کے قیام کی منظوری بھی ہو چکی ہے ۔ تیمر گرہ میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی کیلئے ایک بڑی واٹر سپلائی سکیم کا قیام بھی ممکن بنایا جارہا ہے۔ چکیسرروڈ اور رابطہ پل کو اے ڈی پی میں شامل کیا گیا ہے۔ ملاکنڈ ڈویژن میں ڈبلیو ایس ایس سی کی کارکردگی مزید بہتر کر رہے ہیں جس سے ملاکنڈ ڈویژن کے تمام اضلاع کی صفائی ممکن بنائی جائے گی،ملاکنڈ ڈویژن میں پیتھم ادارے کی بحالی پر بھی سنجیدگی سے غور کیا جائے گا۔ سوات ایکسپریس وے کی تکمیل سے پورے ملاکنڈ ڈویژن میں تجارتی سرگرمیوں کو فروغ ملے گا ۔ حکومت سیاحتی پالیسی اور سیاحتی بورڈ کی تشکیل میں ملاکنڈ ڈویژن سمیت تمام سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لے گی ۔ اُنہوںنے کہاکہ حکومت ملاوٹ پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کرے گی ، البتہ فو ڈ انسپکشن کیلئے تمام متعلقہ اداروں کی ایک مشترکہ ٹیم معائنہ کیا کرے گی تاکہ عوام کو مشکلات کا سامنا بھی نہ ہو۔ملاکنڈ ڈویژن میں محکمہ بلدیات کے نیچے ٹائون کمیٹیاں مکمل فعال بنائی گئی ہیں۔ ضلع ملاکنڈ میں ٹی ایم اے تمام اُمور کو ریگولیٹ کر رہی ہے جس سے بلدیات کے حوالے سے عوام کے زیادہ تر مسائل جلد حل ہو جائیں گے ۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کیلئے پہلے سے دو پل اے ڈی پی میں شامل کئے گئے ہیں جو ٹینڈرنگ فیز میں ہیں ۔ علاوہ ازیںوزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان سے جاپانی سفیرنے خیبرپختونخوا ہائوس اسلام آباد میں ملاقات کی ۔ ملاقات میں باہمی دلچسپی کے اْموراور خیبرپختونخوامیںمختلف ترقیاتی منصوبوں پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ خیبرپختونخوا میںجائیکا کے تعاون سے 28 ارب روپے لاگت سے700 کلومیٹر طویل سڑکوںاور 10 پلوں کی تعمیر ومرمت یقینی بنائی جارہی ہے ۔ وزیراعلیٰ نے ترقیاتی منصوبوں میں جائیکا کے تعاون پر جاپانی حکومت کا شکریہ دا کیا ہے اور اْمید ظاہر کی کہ یہ تعاون آئندہ بھی جاری رہے گا۔اس موقع پر صوبائی وزیر ایلمنیٹری اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن اکبر ایوب ،سیکرٹری سی اینڈ ڈبلیو و دیگر بھی وزیراعلیٰ کے ہمراہ تھے۔