کرونا وائرس کے حفاظتی سامان کا بحران،ڈریپ اور فارمسسٹ ایسوسی ایشن کے درمیان الزام تراشی کا سلسلہ جاری

اسلام آباد،پاکستان میں دو کرونا وائرس کیسز سامنے آنے کے بعد N-95 اور سرجیکل ماسک کا بحران شدت اختیار کر گیا،حفاظتی سامان کی قلت سے ڈاکٹرز،ہسپتال کا عملہ اور عوام میں خوف وہراس بڑھ گیا،شہریوں کی جانب سے مختلف میڈیکل سٹورز،فارمیسی کے باہر لمبی قطاریں،ماسک نایاب ہونے سے عوام خوار ہوگئے ،فارمسسٹ ایسوسی ایشن کی جانب سے بحران کی زمہ داری ڈریپ اور وزارتِ صحت پر ڈال دی گئی ،فارمسسٹ ایسوسی ایشن نے بحران کی تحقیقات کے لیے چیف جسٹس آف پاکستان کو ایک بار پھر خط لکھ دیا ،ڈریپ کی جانب سے 20 ملین سے زائد ماسک بیرون ملک بطور امداد بھیجے گئے،خط کا متناتنی بڑی تعداد میں ماسکس بیرون ملک جانے کے باعث اس قدر شدید بحران سامنے آیا،ہسپتالوں میں ڈاکٹرز،پیرا میڈیکل سٹاف،نرسز کو بھی حفاظتی سامان میسر نہیں۔