وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا سیلف قرنطینہ کا تیسرا دن

ملتان : وزیر خارجہ نے دورہ چین سے واپسی کے بعد، کرونا وبا کے پیش نظر، ہیلتھ پروٹوکول کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے، پانچ روز کیلئے “سلف قرنطینہ” میں رہنے کا فیصلہ کیا

وزیر خارجہ، آج سلف قرنطینہ کے تیسرے روز بھی اپنے ضروری دفتری امور، بدستور گھر سے جاری رکھے ہوئے ہیں

وزیر خارجہ نے تمام پنڈنگ دفتری فائلوں کا ملاحظہ کیا اور ان پر احکامات صادر کیے

وزیر خارجہ نے تمام پاکستانیوں سے اپیل کی ہے کہ وہ کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے،حکومت کی طرف سے دی جانے والی
“حفاظتی تدابیر” اور ہدایات کی پوری طرح پیروی کریں – اجتماعات اور ہجوم والی جگہوں پر جانے سے، حتی الامکان پرہیز کیا جائے- حفظان صحت کے اصولوں کو مدنظر رکھتے ہوئے مصافحہ کرنے اور گلے ملنے سے اجتناب کیا جائے

وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستانی قوم نے ہمیشہ کڑے وقت میں اتحاد اور یکجہتی کا ثبوت دیا ہے اور ہمیں توقع ہے کہ کرونا وائرس کے خلاف اس جنگ میں بھی پوری قوم متحد ہو کر، عزم و ہمت کے ساتھ اس آزمائش سے سرخرو ہو کر نکلے گی

انہوں نے مزید کہا کہ کوئی بھی حکومت تنہا اس کٹھن چیلنج کا مقابلہ نہیں کر سکتی – چین کی طرح اس وائرس کو شکست دینے کیلئے پوری قوم کو متحد ہونا ہو گا-میں آپ کو یقین دلانا چاہتا ہوں کہ حکومت آپ کی حفاظت کو یقینی بنانے کیلئے ، تمام ممکنہ اقدامات اٹھا رہی ہے -ان اقدامات کو موثر بنانے کے لیے عوام کی طرف سے بھرپور تعاون کی ضرورت ہو گی اور حکومت بھی لمحہ بہ لمحہ تمام صورتحال سے عوام الناس کو باخبر رکھے گی.