حکومت نے لوگوں کو درپیش مشکلات کے پیش نظر لاک ڈاون میں نرمی کرنے کا فیصلہ کیا ہے- وزیر اعلی

پشاور: وزیر اعلی محمود خان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ حکومت نے لوگوں کو درپیش مشکلات کے پیش نظر لاک ڈاون میں نرمی کرنے کا فیصلہ کیا ہے، لاک ڈاون میں نرمی کا یہ مطلب نہیں کہ وبا ختم ہوگیا ہے، لاک ڈاون میں نرمی کے باعث وبا کے پھیلاؤ کے امکانات بڑھ گئے ہیں،
وزیر اعلی نے کہا کہ اب احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے کی ضرورت پہلے سے بڑھ گئی ہے، انہوں نے کہا کہ شہری روزمرہ کے معمولات خصوصا خریداری کے وقت احتیاطی تدابیر پر سختی سے عمل کریں، احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد اس وبا سے بچنے کا واحد ذریعہ ہے ،

انہوں نے مزید کہا کہ سماجی فاصلوں کو برقرار رکھ کر ہم خود کو اور دوسروں کو محفوظ بنا سکتے ہیں، تاجر برادری بازاروں میں احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کے سلسلے میں اپنا کردار ادا کرے، ہم مکمل لاک ڈاون کے متحمل نہیں ہو سکتے،
انہوں نے مزید بتایا کہ کورونا کی روک تھام کے ساتھ ساتھ معیشت اور کاروبار زندگی کو بھی چلانا ہے،
عوام کو انفرادی اور اجتماعی طور پر ذمہ داری کا ثبوت دینا ہوگا،