کورونا کی ویکسین ریمڈیسویر پاکستان میں آئندہ چند ہفتوں میں تیارہونا شروع ہو جائے گی

وزیر صحت ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کے علاج میں مددگار ویکسین ’ریمڈیسویر‘ پاکستان میں آئندہ چند ہفتوں میں تیار ہونا شروع ہو جائے گی۔
جمعہ کو ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا تھا کہ اس دوا کی پاکستان میں تیاری کے بعد اسے 127 ممالک میں برآمد کیا جائے گا۔ معاونِ خصوصی کے مطابق ریمیڈیسویر انجیکشن کی صورت میں دستیاب ہو گی اور پاکستان کی کوشش ہو گی کہ یہ دوا کافی کم قیمت میں دستیاب ہو۔
امریکہ کی ایک ادویات تیار کرنے والی کمپنی نے کووڈ 19 کا علاج کرنے والی دوا ‘ریمڈیسویر’ کو وسیع پیمانے پر تیار کرنے کے لیے جنوبی ایشیا سے تعلق رکھنے والی پانچ دوا ساز کمپنیوں سے معاہدے کیے تھے۔ یہ معاہدے ‘گیلیڈ’، انڈیا اور پاکستان کی پانچ دوا ساز کمپنیوں کے درمیان طے پائے ہیں اور یہاں تیار کی جانے والی ویکسین دنیا کے 127 ملکوں کو فراہم کی جائے گی۔

‘ریمڈیسیور’ کے دنیا کے کئی ہسپتالوں میں کیے جانے والے تجرباتی استعمال میں کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی علامات کو پندرہ دن کے بجائے دس دن میں ختم کر دیا تھا۔ وائرس کو ختم کرنے والی یہ دوا اصل میں ایبولا کے علاج کے طور پر تیار کی گئی تھی۔ یہ دوا انسانی جسم میں موجود ان اینزائم یا خامرہ کو ختم کرتی ہی جن کی خلیوں میں توالید کے لیے اس وائرس کو ضرورت ہوتی ہے۔