پورے خطے کی تعمیر و ترقی کا انحصار افغانستان میں قیام امن سے مشروط ہے- وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود

ویب ڈیسک : امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغان امن عمل زلمے خلیل زاد کی وزارت خارجہ میں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی سے ملاقات، خطے کی صورتحال، افغان امن عمل کے حوالے سے خصوصی تبادلہء خیال

امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغان مفاہمتی عمل ایمبیسڈر زلمے خلیل زاد نے کراچی اسٹاک ایکسچینج پر ہونیوالے دہشتگردی کے حملے پر، وزیر خارجہ سے اظہار افسوس کرتے ہوئے، قانون نافذ کرنے والے اداروں کی طرف سے بروقت کارروائی اور جوانوں کی مثالی جرات اور جرات کو سراہا.

مخدوم شاہ محمود قریشی کا اس دوران کہنا تھا کہ افغان امن عمل میں اب تک ہونیوالی پیش رفت، انتہائی حوصلہ افزا ہے
فریقین کی طرف سے بین الافغان مذاکرات پر آمادگی اور مذاکراتی ٹیموں کا اعلان خوش آئند ہے ان مذاکرات سے افغانستان میں مستقل اور دیرپا امن کی راہ ہموار ہو گی.

ان کا کہنا تھا کہ افغان امن عمل، اہم مرحلے میں داخل ہو چکا ہے اس موقع پر ہمیں ان عناصر سے خبردار رہنا ہو گا جو افغانستان میں قیام امن کی کاوشوں کو سبوتاژ کرنا چاہتے ہیں،پاکستان، گذشتہ چالیس برسوں سے افغان مہاجرین کی میزبانی کرتا آ رہا ہے.

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ افغان مہاجرین کی باعزت وطن واپسی کو یقینی بنانے کیلئے، عالمی برادری کو ہاتھ بڑھانا ہو گا ،پاکستان افغان قضیے کے مستقل اور پرامن سیاسی حل کیلئے، علاقائی و عالمی فریقین کے ساتھ تعاون کیلئے تیار ہے، پاکستان مشترکہ ذمہ داری نبھاتے ہوئے، افغانستان میں قیام امن کیلئے اپنا مصالحانہ کردار، خلوص نیت سے ادا کرتا رہے گا،پورے خطے کی تعمیر و ترقی کا انحصار افغانستان میں قیام امن سے مشروط ہے.