نااہل و نالائق حکمران عوام کے ذریعہ معاش کے لئے سونامی بن کرآئےہیں۔پی پی پی چیئرمین

ویب ڈیسک (اسلام آباد)پی پی پی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی ریڈیو پاکستان کے ملازمین کو نوکریوں سے برخاست کرنے کی شدید مذمت ،سلیکٹڈ حکومت نے بیک جنبش قلم 749 خاندانوں کے چولہے بجھا دیئے۔ایک کروڑ نوکریاں دینے کا نعرہ لگانے والا نالائق وزیر اعظم لاکھوں پاکستانیوں کو بیروزگار کر چکاہے۔ پی پی پی چیئرمین کا کہنا تھا کہ ریڈیو پاکستان کے ملازمین سے پہلے پی ٹی ڈی سی کے 450 ملازمین کو فارغ کیا گیا۔سٹیل ملز کے 9 ہزار سے زائد ملازمین کا روزگار بھی سلیکٹڈ حکمرانوں کی آنکھ میں کھٹکتا ہے۔ پی ٹی آئی کی صوبائی حکومتیں بھی وفاقی حکومت سے کم نہیں، آئے روز چھانٹیاں کرتی رہتی ہیں۔ جب حکومت ہی بلاجواز ملازمین فارغ کرنے لگے، تو نجی سیکٹر میں ملازمین کی نوکریوں کا کیا ہوگا۔کرونا وائرس کے باعث عالمی معیشت اور سلیکٹڈ وزیراعظم کی وجہ سے ملکی معیشت کی حالت دگرگوں ہے۔ ایسے مشکل حالات میں ملازمین کو نوکریوں سے نکالنے والے آئی ایم ایف کے وفادار ہیں۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ نااہل و نالائق حکمران عوام کے ذریعہ معاش کے لیئے سونامی بن کر آئے ہیں۔حکومت مثالیں ریاستِ مدینہ کی دیتے ہیں، لیکن ان کے کام مسولینی اور ہٹلرسے بھی بدتر ہیں۔پی پی پی چیئرمین کا مزید کہنا تھا کہ جب سے سلیکٹڈ حکومت آئی ہے، عوام اچھی خبر سننے کو ترس گئیں۔ وفاقی کابینہ کا اجلاس ہو تو شہری سہم جاتے ہیں، وزیراعظم نوٹس لے تو ملک میں خوف کی لہر دوڑ جاتی ہے ،زبان زدِ عام ہے۔موجودہ وفاقی کابینہ کا کام فقط بجلی، گئس، تیل کی قیمتیں بڑھانا اور بیروزگار کرنا ہے۔بلاول بھٹونے کہا کہ اگر حکومت کو خراب کارکردگی والا ایک ملازم برداشت نہیں، تو قوم ایک نالائق وزیراعظم کو کیوں جھیلے ۔پیپلز پارٹی ریڈیو پاکستان کے ملازمین سمیت مختلف اداروں سے بلاجواز برطرف کیئے گئے ملازمین کے ساتھ ہے۔ پیپلز پارٹی ہر فورم پر نوکریوں سے نکالے گئے سرکاری ملازمین کا آواز بنے گی۔بلاول بھٹو زرداری نے کہاکہ نالا ئق حکمرانوں کو گھر جانے کا وقت قریب ہے، آئندہ حکومت پیپلز پارٹی کی ہوگی۔ان کا کہنا تھا کہ کے پیپلز پارٹی کی حکومت آئے گی اور پاکستان میں روزگار اور خوشحالی لائے گی۔بلاول بھٹو زرداری نے تمام برطرف ملازمین کی بحالی کا مطالبہ کیا ہے ،تمام برطرف ملازمین کو فورن بحال کیا جائے۔