وزیر اعظم عمران خان سے ملک کے معروف صنعتکاروں پر مشتمل وفد کی ملاقات

ویب ڈیسک :وزیر اعظم عمران خان سے ملک کے معروف صنعتکاروں پر مشتمل وفد کی ملاقات، وفد میں اعظم فاروق (چراٹ سیمنٹ), بشیر علی محمد (گل احمد), محمد علی تابہ (لکی سیمنٹ), ثاقب شیرازی (ہنڈا اٹلس) فواد مختار (فاطمہ فرٹیلایزر), عارف حبیب (عارف حبیب گروپ لمیٹڈ) اور حسین داؤد (اینگرو کارپوریشن) شامل تھے،وفاقی وزیر محمدحماد اظہر, مشیرانِ وزیر اعظم عبدالرزاق داؤد, ڈاکٹر عبدلحفیظ شیخ اور ڈاکٹر عشرت حسین کے علاوہ اعلیٰ سرکاری حکام بھی ملاقات میں موجود.
وفد کی شرکاء نے وزیراعظم کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ کاروباری سرگرمیوں کو میسرحکومتی سرپرستی کے مثبت نتائج آنا شروع ہو چکے ہیں، انہوں نے کہاکہ ملکی فارن ایکسچینج ریزرو کا بلند ترین سطح پر ہونا پاکستان کی معیشت میں استحکام کی عکاسی کرتا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ حکومتی معاشی ٹیم ہر وقت ان کی رہنمائی اور مسائل کے حل کیلئے دستیاب ہوتی ہے، انہوں نے وزیراعظم کو بتایا کہ حکومتی کاوشوں سے پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ کا خسارے سے نکل کر سر پلس ہونا معیشت کیلئے انتہائی خوش آئند ہے.
وفد کی شرکاء نے وزیراعظم کی تعمیراتی شعبے کی سرپرستی پر شکریہ ادا کیا اور کہا کہ اس وقت سیمنٹ کی کھپت ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر ہے، انہوں نے مزید کہا کہ کرونا وبا کے باوجود تعمیراتی سرگرمیوں میں تیزی اور ٹیکسٹائل برآمدات میں اضافے سے معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہو چکے ہیں اور لوگوں کو روزگار کے مواقع ملے ہیں، وفد کی شرکاء نے حکومتی پالیسیوں پر مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے معیشت کی بہتری کیلئے اپنے خدمات پیش کیں.
وزیر اعظم نے کہا کہ حکومت کا کام صنعتوں اور کاروباری سرگرمیوں کیلئے آسانیاں اور سہولتیں فراہم کرنا ہے، ملکی ترقی و خوشحالی صنعتی شعبے اور کاروباری طبقے کی ترقی سے وابسطہ ہے، حکومتی فیصلہ سازی کے عمل میں صنعتکاروں کی تجاویز کو شامل کیا جا رہا ہے جس کے مثبت اثرات مرتب ہو رہے ہیں.
وزیر اعظم نے صنعتکاروں کو ایکسپورٹس میں پیش آنے والے مشکلات کو جلد از جلد حل کرنے کی ہدایت کی. صنعتکاروں سے زراعت کے شعبے میں جدت لانے اور مختلف فصلوں کی پیداواری صلاحیت بڑھانے کیلئے بڑے پیمانے پرکارپوریٹ فارمنگ شروع کرنے کیلئے تجاویز مانگ لیں.