اسامہ ستّی واقعہ کی جوڈیشل انکوائری رپورٹ سامنے آگئی

ویب ڈیسک: اسامہ ستّی واقعہ کی جوڈیشل انکوائری رپورٹ سامنے آگئی، رپورٹ کے مطابق اسامہ کے قتل کو چار گھنٹے فیملی سے چھپا کر موقع پر موجود افسران نے وقوعہ چھپانے کی کوشش کی، پولیس نے وقوعہ کو ڈکیتی بنانے کی کوشش کی، مقتول کو ریسکیو کرنے والی گاڑی کو غلط لوکیشن بتائی جاتی رہی، موقع پر موجود افسر نے جائے وقوعہ کی کوئی تصویر نہیں لی، اسامہ ستّی کا کسی ڈکیتی یا جرم سے کوئی واسطہ ثابت نہیں ہوا، ڈیوٹی افسر نے غیر ذمہ دادی کا مظاہرہ کیا۔

اسامہ کو چار سے زائد اہلکاروں نے گولیوں کا نشانہ بنایا، گولیوں کے خولز کو 72 گھنٹے بعد فرانزک کے لئیے بھیجا گیا، اسامہ ستّی کی گاڑی پر بائیس گولیوں کی بوچھاڑ کی گئی، اسامہ ستّی کی لاش کو پولیس نے روڈ پر رکھا جبکہ پولیس کنٹرول نے 1122 کو غلط ایڈریس بتایا۔