کشمیریوں کوانسان ہونےکاحق ہی نہیں،عورت توبہت دورکی بات، مشعال ملک

ویب ڈسک(کشمیر)کشمیری حریت رہنما یاسین ملک کی اہلیہ مشعل ملک نے خواتین کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ کشمیر میں عورت ہونا سب سے بڑا جہاد ہے۔

مشعال ملک نے کہا کہ آج دنیا بھر میں خواتین کا عالمی کا دن منایا جا رہا ہے۔ کشمیریوں کو انسان ہونے کا حق ہی نہیں، عورت تو بہت دور کی بات ہے۔مقبوضہ کشمیر کی عورت کو سدا سہاگن کا کوئی حق نہیں ہےہندوستان کی فورسز عورت ریپ کو جنگی حربے کے طور پر استعمال کررہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آج کے دن سب کی توجہ مقبوضہ کشمیر کی خواتین کی جانب مبذول کرانا چاہتی ہیں۔ کشمیر کی ماوں بہنوں نے آنسو بہانے ہیں چیخیں پکاریں کرنی ہیں، انکو صرف یہی حقوق دیے گئے ہیں مقبوضہ کشمیر میں ایک ماں کا صرف اپنے بیٹے کو دفنانے کا حق ہے۔

مشعال ملک نے کہا اقوام عالم کی عورت سے سوال کرتی ہوں مقبوضہ کشمیر کی عورت ،کیا عورت نہیں ہے۔

خواتین کے عالمی دن پر حریت رہنما عبدالحمید لون نے کہا کہ مقبوضہ جموں کشمیر میں بھارت کے غیر انسانی محاصرے میں خواتین سب سے زیادہ متاثر ہیں۔ خوف و ہراس کے ماحول میں کشمیری خواتین ذہنی ڈپریشن کا شکار ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ 5 اگست 2019 بھارتی اقدامات کے بعد خواتین گھروں کے اندر محصور ہو کر رہ گئی ہیں۔ مقبوضہ وادی میں خواتین اپنے آپ کو محفوظ نہیں سمجھتیں۔

خیال رہے آج دنیا بھر میں عالمی یوم نسواں منایا جا رہا ہے۔ اس دن دنیا بھر کی خواتین اپنی معاشرتی کاوشوں، حقوق کے لیے جدوجہد، مساوات کے لیے کوششوں اور مختلف شعبہ ہائے زندگی میں نمایاں کارکردگی کا اظہار کرتی ہیں۔