لکی مروت:ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال کے کورونا وارڈ میں سنٹرلائزڈ آکسیجن ختم،مریضوں کو مشکلات درپیش

ویب ڈیسک(لکی مروت)لکی مروت ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال کے کورونا وارڈ میں سنٹرلائزڈ آکسیجن ختم ہوگئے جبکہ انفرادی آکسیجن سلنڈر بھی ختم ہونے کے برابرہے۔

لکی مروت میں کورونا کے 61 ایکٹیو کیسز ہیں۔مریضوں کے لواحقین سراپا احتجاج،ایم ایس ہسپتال سے غائب ہے۔

انور صدیق مریض کیئر ٹیکر کے مطابق صبح سے آکسیجن ختم تھی،ابھی دو سلنڈر لائے ہیں ہمارے مریض کو آخری سلنڈر لگا ہے اس کے بعد کوئی سلنڈر نہیں۔اگر آکسیجن کی وجہ سے ہمارے مریض کو کچھ ہوا تو ہسپتال انتظامیہ ذمہ دار ہوگی۔اگر مریض کو کچھ ہوا تو ہسپتال انتظامیہ سے سخت انتقام لیں گے۔

ٹیکنیشن خالد عثمان کا کہنا ہے کہ کورونا وارڈ میں چھ مریض داخل ہیں تمام مریضوں کوانفرادی سلنڈرلگےہوئےہیں۔یہ سلنڈز 2 بجےتک کام کرسکتےہیں،ان سلنڈرز کےبعد ہمارے پاس ہسپتال میں کوئی سلنڈر نہیں ہے۔لواحقین کو حفظ ماتقدم کے طور پر مریضوں کو دوسرے ہستالوں کو شفٹ کرنے کا کہہ رہے ہیں۔

ڈی ایچ او کے مطابق کورونا وارڈ کیلئے دوسرے ہسپتالوں سے پانچ سلنڈروں کا بندوبسٹ کر لیا ہے۔