ایف آئی اے میں غیرقانونی طورپر تعینات افسران کی چھٹی

ویب ڈیسک(اسلام آباد) وزارت داخلہ نے وفاقی تحقیقاتی ادارے(ایف آئی اے) میں غیرقانونی طور پر تعینات کیے گئے 14 افسران کو نکالنے کے احکامات جاری کردیے۔

وزارت داخلہ کا کہنا ہےکہ ایف آئی اے میں ضم 14 افسران کو محکموں میں واپس بھیجا جائے۔ افسران غیرقانونی طور پر1988سے ایف آئی اے میں ضم ہوتے آرہے ہیں۔ سپریم کورٹ افسران کے ایف آئی اے میں انضمام کو غیر قانونی قرار دے چکی ہے۔

ایف آئی اے سے نکالے جانے والوں میں ایڈیشنل ڈائریکٹر میرمظہرجبار، نصراللہ خان گوندل، اسسٹنٹ ڈائریکٹر لبنیٰ ٹوانہ اور انسپکٹرزرین آمنہ شامل ہیں۔

اسی طرح میر مظہرجبار سی اینڈ ڈبلیو اور نصراللہ خان گوندل پنجاب پولیس میں واپس جائیں گے۔

لبنیٰ ٹوانہ سندھ پولیس، جاویداقبال رحمانی ایف بی آر کسٹمز واپس جائیں گے۔ زرین آمنہ موٹروے پولیس، مرزا عظمت جاوید واپڈا میں رپورٹ کریں گے۔ عامر عباس کی ایف آئی اے سے بلوچستان پولیس میں واپسی ہوگی۔