ایبٹ آباد میں خاتون

ایبٹ آباد میں خاتون کے دو افراد پر اغوا و زیادتی کے الزامات

ویب ڈیسک: ایبٹ آبادکے علاقے بو گراں کی خاتون نے دو افراد پر اپنے اغوا ،جنسی زیادتی اور اس عمل کے دوران ویڈیو بنانے کے الزامات عائد کیے ہیں ۔ متاثرہ خاتون کنزہ بی بی نے اپنے والد علی مردان ،بھائی لیاقت اور دو بچوں کے ہمراہ ایبٹ آباد پریس کلب میں پریس کانفرنس میں بتایا کہ ملزم اجمل نے اپنے ساتھی ابرار کے ساتھ 26 جولائی کو اسے بوگراں سے سیری ڈھیری جاتے ہوئے دو بچوں سمیت اسلحہ کی نوک پر اغوا کیا اور دو دن اپنے گھر رکھنے کے بعداسیراولپنڈی ساتھ لے گئی جہاں17 دن تک اس کے ساتھ نشہ اور اشیا کھلا کر ذیادتی کرتے اور بچوں کے سامنے ویڈیو بھی بناتے رہے ۔

خاتون کا کہنا تھا کہ پنڈی کے بعد اسے پھر تین دن گجرانوالہ میں رکھا گیاجہاں موقع ملنے پر اس نے خاوند سے رابطہ کیا اور خاوند گجرنوالہ سے گھر لے کر آیا ،خاتون کے مطابق اس نے تھانہ گڑھی حبیب اللہ میں ملزمان کے خلاف رپورٹ درج کرائی