ایف بی آر

29ستمبرکوایف بی آرکے گھیرائو کا اعلان

ویب ڈیسک :پشاور کے تاجروں نے ایف بی آرکے گھیرائو کا اعلان کر دیا۔یہ اعلان ظالمانہ ٹیکس نظام اور صدارتی ٹیکس آرڈیننس کے خلاف کیا گیاہے ۔ صوبے کی تاجر برادری آل پاکستان انجمن تاجران کے ساتھ29ستمبر کو اسلام آباد میں ایف بی آرکے سامنے احتجاج کرے گی۔

یہ بھی پڑھیں :مالی بحران کے سبب افغانستان میں پرنٹ میڈیابند

اس سلسلے میں مرکزی تنظیم تاجران خیبرپختونخوا کے صدر ملک مہر الہی کی زیر صدارت اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں صوبے کے دیگر اضلاع کے مرکزی صدور، پشاور کے مختلف بازاروں کے صدور و جنرل سیکرٹریز نے بھر پور شرکت کی۔

اجلاس میں حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا گیا کہ تاجر ٹیکس دینا چاہتے ہیں اس نظام کو آسان بنایا جائے۔ دکان کا رقبہ بنیاد نہیں کاروبار کی نوعیت اور حجم کو بنیاد بنا کر سیلز ٹیکس میں رجسٹریشن کا قانون بنایا جائے۔

جب چھوٹا تاجر سیل ٹیکس میں آتا ہی نہیں تو پوائنٹ آف سیل کا ڈرامہ بند کیا جائے۔ چھوٹا تاجر حساب کتاب لکھنے سے قاصر ہے خرید و فروخت پر شناختی کارڈ کی شرط ختم کی جائے۔

تاجروں کے ساتھ کئے گئے تحریری معاہدوں پر عمل کرتے ہوئے ریجنل سطح پر تاجر تنظیموں کی کمیٹیوں کو فعال بنایا جائے۔

فرنیچر انڈسٹری کو کاٹیج انڈسٹری کا درجہ دیا جائے۔ ٹرن اور ٹیکس کی عمومی شرح 0.25 فیصد کی جائے۔حکومت کی ان ناقص پالیسیوں کے خلاف صرف تاجر نہیں پوری قوم سراپا احتجاج ہے۔