Lahore woman sentenced to death for claiming to be prophet

نبوت کی دعویدارخاتون کو پھانسی کی سزاسنادی گئی

ویب ڈیسک (لاہور)لاہور کی ایک ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت نے ایک اسکول کی خاتون پرنسپل کو نبوت کا دعوی کرنے پر سزائے موت سنائی ہے –

استغاثہ نے مجرمہ سلمہ تنویر کے خلاف کیس کو کامیابی سے ثابت کیا جبکہ مدعا علیہ یہ ثابت کرنے میں ناکام رہے کہ ملزمہ نبوت کا دعویٰ کرتے وقت ذہنی طور پر نارمل نہیں تھیں۔

سلمہ نے 3 ستمبر 2013 کو لاہور میں اپنی رہائش گاہ کے قریب علاقے میں ایک پمفلٹ شائع اور تقسیم کیا تھا جس میں اس نے ختم نبوت کی تردید کی تھی ۔مقامی لوگوں کی جانب سے اس کے خلاف مقدمہ درج کرانے کے بعد پولیس نے اسے گرفتار کر لیا تھا۔