گیس نایاب

گیس بحران شدید ہونے کا خدشہ، صنعتیں چلانے کیلئے نایاب

ویب ڈیسک: گیس بحران شدید ہونے کا خدشہ پیدا ہوگیا، صنعتیں چلانے کے لئے گیس نایاب ہوگئی۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق  پاکستان ایل این جی لمیٹڈ کو ایل این جی سپلائی کے لیے عالمی کمپنیوں کی طرف سے کوئی رسپانس نہیں  ملا۔

دسمبر اور جنوری میں مجموعی طور پر آٹھ ایل این جی کارگوز کی سپلائی کے لیے ایک بھی بولی نہ آئی، ایل این جی کے انتظامات میں مزید تاخیر کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے ،صنعتکار فیکٹریاں چلانے کے لئے پرانے طریقوں پر واپس لوٹنے لگے، ایل پی جی سے گیس پر منتقل کراچی میں چمڑے کی صنعت اب دوبارہ ایل پی جی پر منتقل ہورہی ہے۔

دوسری جانب وفاقی حکومت نے موسم سرما میں گیس کی 15 گھنٹے کی طویل لوڈشیڈنگ کا فیصلہ کر لیا، صارفین کو 24 گھنٹے کے دوران صرف 9 گھنٹے گیس دستیاب ہو گی۔

ذرائع نے بتایا کہ گیس دن میں تین بار تین تین گھنٹوں میں دستیاب ہوگی، شیڈول کے مطابق ناشتہ ، دوپہر اور رات کے کھانے کے اوقات میں پریشر کیساتھ گیس دی جائیگی جبکہ دیگر اوقات کار میں گیس پریشر ڈائون کر دیا جائیگا۔