طالبان لڑکیوں کے سکول

طالبان کا لڑکیوں کے سکول جلد کھولنے کا عندیہ

ویب ڈیسک (کابل) ترجمان طالبان نے کہا ہے کہ لڑکیوں کے سیکنڈری اسکولز بھی جلد کھول دیئے جائیں گے۔

طالبان نے افغان لڑکیوں کیلئے تعلیمی ادارے جلد دوبارہ کھولنے کا عندیہ دیا ہے۔ افغانستان میں طالبان کی حکومت کے قیام کے بعد لڑکیوں کے تعلیمی ادارے بند کر دیئے گئے تھے اور پوری دنیا کیجانب سے افغان حکام سے لڑکیوں کے تعلیمی ادارے کھولنے پر زور دیا جارہا تھا۔ افغان طالبان کیجانب سے لڑکوں کےتمام تعلیمی ادارے کھول دیئے گئے تھے اور پرائمری تک بچیوں کو بھی سکول جانےکی اجازت دیدی گئی تھی لیکن سیکنڈری سکول، کالجز اور جامعات کی لڑکیوں کو پالیسی بننے تک گھر پر رہنے کا کہا گیاتھا۔

یہ بھی پڑھیں:پل سوختہ کے سوختہ جاں نشئی جن پر طالبان مہربان ہو گئے

اب افغانستان کی وزارت داخلہ کے حکام کا کہنا ہے کہ بہت جلد لڑکیوں کے تعلیمی ادارے دوبارہ کھل جائیں گے۔ ترجمان افغان وزارت داخلہ قاری سعید خوستی کا کہنا ہے کہ لڑکیوں کے سکول کھولنے کی حتمی تاریخ کا اعلان وزارت تعلیم کریگی ان کا کہنا تھا کہ میری معلومات کے مطابق بہت جلد تمام جامعات اور سیکنڈری سکول دوبارہ کھول دیئے جائیں گے اور تمام خواتین اور لڑکیاں اپنے تعلیمی اداروں اور نوکریوں کو جائیں گی۔