کھلاڑی ذبح

طالبان پرخاتون کھلاڑی کو ذبح کرنے کاالزام

ویب ڈیسک:افغان خاتون والی بال کھلاڑی کا سر قلم کر دیا گیا، وہ افغانستان میں والی بال کی 30 کو خواتین کھلاڑیوں میں سے ایک تھی جو طالبان کے کابل پر قبضے کے بعد ملک سے فرار نہیں ہوسکیں۔

میڈیارپورٹس کے مطابق افغان کارکن زالا زازئی نےمنگل کوٹویٹر پر ایک ٹویٹ میں انکشاف کیا کہ طالبان نے قومی خواتین والی بال ٹیم کی کھلاڑی کو قتل کردیا ہے۔ خاتون کھلاڑی کا گلہ کاٹ کر اسے موت کے گھاٹ اتارا گیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ جو کھلاڑی فرار نہیں ہوسکیں انہیں فوری مدد کی ضرورت ہےایک کھلاڑی ان دہشت گردوں کے ہاتھوں ماری گئی ہے ہم اپنے دوسری کھلاڑیوں کو کھونا نہیں چاہتے وہ کابل میں پھنسی ہوئی ہیں اور کوئی ان کی نہیں سنتا۔

یہ بھی پڑھیں:خواتین کے کرکٹ کھیلنے پر کوئی پابندی نہیں لگائی، طالبان

انہوں نے کھلاڑی کی دو تصاویر بھی شائع کیں۔ ایک میں اسے خواتین کی ٹیم کے ساتھ دیکھا جاسکتا ہے جب کہ دوسری تصویر میں اسے قتل کے بعد مردہ حالت میں دکھایا ہے۔ خواتین ٹیم کی کھلاڑی مزجان سادات نے عالمی برادری اور کینیڈا کے وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو سے افغان کھلاڑیوں کی مدد کی اپیل کی۔