مصباح الحق

مصباح الحق نے زبان کھول دی، سلیکشن پر تنقید

ویب ڈیسک : مصباح الحق نے آخرکار چپ کا روزہ توڑ ہی دیا،انھوں نے ہیڈ کوچ کی ذمہ داری سے مستعفی ہونے کے معاملے پر زبان کھول دی۔

ایک نجی ٹی وی پر اظہار خیال کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ پاکستان میں صرف نتیجے پر ہی توجہ دینا بڑا مسئلہ ہے، ہم اس سے آگے جاتے ہی نہیں اور نہ ہی کھلاریوں اور اسکلز میں بہتری پر توجہ دی جاتی ہے، جیسے ہی کسی ایک میچ یا سیریز میں شکست ہو تو خود کو بچانے کیلیے قربانی کے بکرے ڈھونڈنا شروع کردیتے ہیں، اگر ہم نے اسی طرح کاسمیٹک سرجری کا سلسلہ جاری رکھا تو کسی بھی قسم کی کوئی تبدیلی نہیں آئے گی، آپ کوچز اور پلیئرز کو تبدیل کرسکتے ہیں مگر اصل مسائل بدستور موجود رہیں گے۔مصباح الحق نے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کیلیے پی سی بی کی سلیکشن کمیٹی کی جانب سے تبدیلیوں کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا، جس کے تحت سینئر آل رائونڈر شعیب ملک اور وکٹ کیپر بیٹسمین سرفراز احمد کی واپسی ہوئی تھی۔

انھوں نے کہا کہ پہلے آپ نے ٹیم کیلیے تبدیلیاں کیں اور پھر چند روز بعد یوٹرن لے کر نکالے ہوئے کرکٹرز کو واپس لے آئے۔یاد رہے کہ مصباح الحق کو پہلے چیف سلیکٹر اور ہیڈ کوچ دونوں کی ذمہ داری دی گئی تھی مگر بعد میں ان سے ٹیم سلیکشن کا اختیار واپس لے لیا گیا تھا۔