پیمرا

پیمرا نے کالعدم ٹی ایل پی کی میڈیا کوریج پر پابندی لگا دی

ویب ڈیسک(اسلام آباد) پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرانے کالعدم تحریک لبیک پاکستان کی میڈیا کوریج پر پابندی عائد کردی۔

پیمرا اعلامیے کے مطابق پیمرا نے ت مام ٹی وی چینلز کو کالعدم تحریک لبیک پاکستان کی کوریج سے روک دیا ہے۔ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ایف ایم ریڈیو، کیبل آپریٹرز اور آئی پی ٹی وی کو بھی کوریج روکنے کی ہدایت کی ہے۔ کالعدم تحریک لبیک کی میڈیا کوریج پر پابندی میڈیا کوڈ آف کنڈکٹ کے تحت لگائی، میڈیا کوڈ آف کنڈکٹ 2015 کے تحت کالعدم تنظیموں کی میڈیا کوریج ممنوع ہے۔ پیمرا کے اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ وزارت داخلہ نے تحریک لبیک پاکستان کو 15 اپریل 2021 کو کالعدم قرار دیا ہے اور دہشتگردی کی کارروائی میں ملوث ہونے پر ٹی ایل پی کو کالعدم قراردیا۔

دل والے ہر حال میں دلہنیا لے جائیں گے

خیال رہے کہ کالعدم تنظیم کا احتجاج ساتویں روز میں داخل ہو گیا اور مظاہرین کی بڑی تعداد کامونکی میں موجود ہے۔ عسکریت پسند تنظیم کے احتجاج کے ساتویں روز مظاہر ین کے مارچ کو آگے بڑھانے کی تیاریاں شروع کر دی گئی ہیں ۔ کامونکی میں متعدد کاروباری مراکز بند ہیں جبکہ تعلیمی ادارے نہیں کھل سکے ۔ شہر اور جی ٹی روڈ پر کاروباری مراکز نجی اور سرکاری سکول بند کرادیئے گئے ہیں جب کہ جی ٹی روڈ پر دکانیں ریسٹورنٹس بھی بند کرادیئے گئے ہیں ۔ دریائے چناب پل کے قریب جی ٹی روڈ پر خندق کھودی گئی ہے اور کنٹینر بھی رکھے گئے ہیں جب کہ وزیر آباد سے سیالکوٹ جانے والی سڑک کی کھدائی کرکے دونوں شہروں کا زمینی رابطہ منقطع کر دیا گیا ہے۔ دوسری طرف سادھوکی کے مقام پر کھودے گئے گڑھوں کی مرمت کا کام بھی شروع نہیں ہو سکا۔

واضح رہے کہ حکومت نے عسکریت پسند تنظیم کی طرح نمٹنے کا فیصلہ کیا ہے اور پنجاب بھر میں دو ماہ کے لیے رینجرز بھی تعینات کر دی گئی ہے۔