بدترین تشدد

بھارت میں ہندوئوں کے تشدد سے مسلمان شہری جاں بحق

ویب ڈیسک: بھارت میں ریاست تری پورہ میں مسلمان شہری کو بدترین تشدد کر کے شہید کر دیا گیا۔ گاؤں کمال نگر میں انتہا پسندوں نے مسلمان شہری پر گائے چوری کا الزام لگا کر پہلے گالم گلوچ اور بدتمیزی کی اور پھر بہیمانہ تشدد کر کے اس کی جان لے لی۔

بھارتی میڈیا حملہ آوروں پر تنقید کی بجائے مقتول کی کردار کشی کرتا رہا. بدترین تشدد میں جاں بحق شخص کو بنگلا دیشی اور مویشیوں کا اسمگلر بتایا جاتا رہا. واضح رہے کہ بھارت میں اقلیتوں خصوصا مسلمانوں کو نفرت انگیز سلوک کا نشانہ بنایا جاتا ہے. ماضی میں بھی کئی واقعات میں مسلمانوں کو بدترین تشدد کے ذریعے انتہائی ظالمانہ طریقے سے شہید کر دیا گیا۔

جمائما خان سے ڈیانا کی بے عزتی برداشت نہ ہوئی

امریکی اخبار نیویارک ٹائمز کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مودی سرکار کے مسلمانوں کیخلاف معاندانہ رویہ سے بھارت کی عالمی ساکھ خراب ہو چکی. بھارت جنوبی ایشیا میں اپنا اثر کھو رہا ہے۔ امریکی اخبار کے مطابق بھارت میں مسلمانوں سے امتیازی سلوک سے جنوبی ایشیا میں رواداری کو نقصان پہنچا، ہمسایہ ممالک چین کو متبادل کے طور پر دیکھتے ہیں چین نے نہ صرف پاکستان کیساتھ تعلقات کو مزید مضبوط کیا ہے جبکہ نیپال، سری لنکا اور بنگلہ دیش سے بھی بہتر تعلقات قائم کر لیے ہیں۔

مزید دیکھیں :   شہید جگری دوستوں کی بی ون امتحان میں کامیابی