چارکانوں والی بلی

چار کانوں والی بلی سوشل میڈیا پر77ہزار فالورز

ویب ڈیسک : میداس کی پیدائش کے دوران جینیاتی تبدیلی کی وجہ سے چار کانوں اور ناکارہ جبڑے کے ساتھ پیدا ہونے والی بلی اگرچہ ابھی چار ماہ کی ہے مگرترکی کی یہ سیاہ بلی سوشل میڈیا پر کافی مقبول ہے۔ یہاں تک کہ وہ انٹرنیٹ اسٹار بن گئی ہے۔


سوشل میڈیا پر 77 ہزار سے زائد افراد نے اسے فالو کیا ہے۔ میڈیارپورٹس کے مطابق بلی کا بچہ انقرہ کی ایک سڑک پرپانچ بہن بھائیوں کے ساتھ پیدا ہوا۔ بعد میں اسے دیوسیمی کان اور اس کے خاندان نے گود لیا تھا۔ خاندان کے افراد کا کہنا تھا کہ انہیں پہلی نظرمیں میداس سے پیار ہو گیا تھا، اور وہ اس کی اپنے گھر میں میزبانی کرنا چاہتے تھے۔ دو سیمچی جو جو ریٹریور نسل کے دو کتوں کو بھی پال رہی ہیں نے کہا کہ کبھی بلی خریدنے کے بارے میں نہیں سوچا۔ ہم صرف ایک بلی کو آوارہ پھرنے سے بچانا چاہتے ہیں۔ ہم اسے گود لینا چاہتے تھے۔


بلی کا نام یونانی افسانوں میں کنگ میداس کے کردار سے ماخوذ ہے۔ ایک بادشاہ جو کسی بھی چیز کو ہاتھ لگا کر سونے میں تبدیل کرنے کی صلاحیت رکھتا تھا لیکن اس کے کان گدھے کے ہوتے تھے۔میداس نے انٹرنیٹ پر دو کتوں، سوسی اور زینو کے ساتھ اپنی روزمرہ کی زندگی کے بارے میں سوشل میڈیا پوسٹس کے ذریعے بڑے پیمانے پر شہرت حاصل کی۔


اگرچہ میداس عجیب لگتی ہے لیکن اس کی حالت نے اس کی صحت یا اس کے سننے کی حس کو متاثر نہیں کیا۔ جانوروں کے ڈاکٹر، رست نوری اسلان کا کہنا ہے۔ میداس کو طبی لحاظ سے جو چیز ممتاز کرتی ہے وہ یہ ہے کہ چاروں کان سمعی لہروں سے جڑے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ امید کرتی ہیں کہ میداس کی مقبولیت لوگوں کو پالتو جانوروں کو اسٹورز میں خریدنے کے بجائے اپنانے پر راضی کررہی ہے۔