بیٹی کو الٹا لٹکانے والا باپ گرفتار

بیٹی کو پنکھے سے الٹا لٹکانے والا سنگدل باپ گرفتار

ویب ڈیسک: پہلی بیوی کو ذہنی اذیت دینے کیلئے اپنے ہی بچوں کو بری طرح تشدد کا نشانہ بنانے والے ملزم کو گرفتار کر لیا گیا۔ بچوں پر تشدد کے واقعات تو آپ نے بہت سارے سنے اور دیکھے ہوں گے. مگر کوئٹہ سے سامنے آئی ویڈیو نے لوگوں کے دل دہلا دیے تھے. جس میں کوئی اور نہیں بلکہ ایک سگا باپ اپنی بیٹی اور دو معصوم بیٹوں پر بیہمانہ تشدد کر رہا تھا۔

کوئٹہ کے علاقے نواکلی کے زرغون آباد فیز ون کے رہائشی 35 سالہ محمد ابراہیم جو ایک ادارے میں ملازم ہے. اور درزی کا کام بھی کرتا ہے. اس کی شادی آٹھ برس قبل ہوئی تھی۔ اس کے تین بچے ہیں جن میں بیٹی اقرا کی عمر سات سال جبکہ بیٹوں سبحان اور عثمان کی عمریں بالترتیب چھ اور تین سال ہیں۔پچھلے کچھ برسوں کے دوران بیوی سے رہنے والے ناچاکی کے باعث ابراہیم نے پانچ ماہ قبل دوسری شادی کرلی تو اس کی پہلی بیوی ناراض ہو کر اپنے میکے چلی گئی اور بچے ابراہیم کے پاس چھوڑ گئی۔

ابراہیم نے پہلی بیوی کو واپس گھر لانے کی بہت کوششیں کیں مگر وہ واپس نہیں آئی تو اس نے ایک انوکھا طریقہ سوچا اور اپنی سات سالہ بیٹی کو پنکھے سے لٹکا کے اور دو بیٹوں پر بیہمانہ تشدد کرنے کی ویڈیو بنائی اور پہلی بیوی کو اذیت دینے کیلئے اسے بھجوا دی۔ بیوی کی جانب سے ویڈیو کو سوشل میڈیا اکائونٹس پر وائرل کردیا گیا. ویڈیو کے منظر عام پر آنے کے بعد زرغون آباد پولیس حرکت میں آئی اور محمد ابراہیم کے گھر چھاپہ مارکر نہ صرف اسے گرفتار کیا. بلکہ ایک کمرے میں بند تینوں بچوں کو بازیاب بھی کرالیا۔ ان بچوں کو اب ابراہیم کی پہلی بیوی کے حوالے کر دیا گیا ہے۔