آئی ایم ایف

آئی ایم ایف سے معاہدہ طے،1ارب ڈالر ملیں گے

ویب ڈیسک: پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان سٹاف لیول ایگریمنٹ طے پا گیا جس کے مطابق پاکستان کو ایک ارب ڈالر سے زیادہ کی اگلی قسط جاری کی جائے گی، آئی ایم ایف کا ایگزیکٹو بورڈ چھٹے جائزے کی تکمیل کی حتمی منظوری دے گا۔


پیر کو جاری اعلامیہ کے مطابق آئی ایم ایف نے کہا کہ قرض پروگرام کی بحالی پیشگی شرائط پر عمل درآمد سے مشروط ہوگی، اگلی قسط کے اجراء سے پاکستان کو فراہم کردہ رقم 3 ارب ڈالر سے تجاوز کر جائے گی۔ اعلامیہ کے مطابق پاکستان نے جون تک کے کارکردگی اہداف بڑے مارجن سے پورے کر لیئے، آئی ایم ایف نے فیٹف پلان پر عمل درآمد کی بھی تعریف کی ۔منی لانڈرنگ، ٹیرر فنانسنگ کیخلاف پیش رفت کی گئی۔ آئی ایم ایف نے کہا کہ ایف بی آر کے ٹیکس محاصل میں بہتری آئی، کرنٹ اکائونٹ خسارہ بڑھا، روپے کی قدر میں کمی آئی ، رواں سال جی ڈی پی گروتھ 4 فیصد سے زیادہ رہنے کا امکان ہے ۔


آئی ایم ایف کے مطابق پاکستان نے جون تک کارکردگی اہداف بڑے مارجن سے پورے کرلیے، پاکستان پر عالمی سطح پر بڑھتی قیمتوں کا اثر پڑا، فیٹف پلان پر عمل درآمد ، ایف بی آر اور اسٹیٹ بینک کی کارکردگی کی تعریف بھی کی گئی ہے اسٹیٹ بینک کو خود مختار کرنے کے بل کو سراہا گیا، برآمدات کو بڑھانے کے لیے بہتر قانون سازی کی جائے، سروسز کی سپلائی بہتر کرنا ہوگی، براہ راست بیرونی سرمایہ کاری میں اضافہ کرنا ہوگا جب کہ تعلیم اور انسانی وسائل میں سرمایہ کاری کو بڑھانا ہوگا۔