ٹیسٹ ٹیوب کے ذریعے بچے پیدا

ٹیسٹ ٹیوب کے ذریعے بچے پیدا کرنیوالے کلینک پر بھاری جرمانہ

ویب ڈیسک :بیلجیئم کی عدالت نے ٹیسٹ ٹیوب کے ذریعے بچے پیدا کرنے والے کلینک پربھاری جرمانہ عائد کردیا۔اسپین کے جوڑے کوبڑے بیٹے کے تھیلیسیمیا کے علاج کیلئے بون میرو عطیہ کرنے والے اپنے صحت مند بچے کی ضرورت تھی۔

انہوں نے ٹیسٹ ٹیوب بچے کیلئے برسلزکے ایک کلینک سے رابطہ کیا۔کلینک نے غلطی سے جین بدل دئیے اور جوڑے کے ہاں جڑواں بچے پیدا ہوئے جو بون میرو عطیہ کرنے کے قابل نہیں تھے لہذا جوڑے کو میڈرڈ کے کلینک سے رابطہ کرکے صحت مند ڈونر بچہ حاصل کرنا پڑا۔بعد میں جوڑے نے برسلز کلینک کیخلاف کیس کردیا اور عدالت نے کلینک کے خلاف فیصلہ دیتے ہوئے حکم دیا کہ ماں کو27 ہزار اور باپ کو 11ہزار یورو ہرجانہ ادا کیا جائے، اس کے علاوہ عدالت نے بچے کے علاج میں تاخیر پر 5 ہزار اور والدین پر پڑنے والے مالی بوجھ کو کم کرنے کی مد میں 25ہزاریورو دینے کا حکم بھی دیا۔