اومی کرون عالمی منڈی شدید مندی

”اومی کرون ” کے بعد عالمی منڈی شدید مندی کا شکار

ویب ڈیسک: دوا ساز کمپنی موڈرنا کی جانب سے کورونا ویکسین کو نئے ویریئنٹ کے لیے کم مؤثر قرار دیے جانے کے بعد کاروباری دنیا میں تیزی سے گراوٹ سامنے آئی ہے۔

اے ایف پی کے مطابق عالمی سطح پر سٹاک ایکسچینج اور تیل کی عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں بھی تیزی سے گری ہیں. جبکہ یورپی ممالک میں مہنگائی میں تیزی دیکھنے میں آئی ہے۔ تاہم دیگر بڑی دواساز کمپنیوں بائیو ٹیک اور فائزر نے موڈرنا کے انتباہ کے بعد کہا ہے کہ ویکسین کی افادیت کے حوالے سے کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہے جس کے بعد ایشیا کے چند ممالک کی مارکیٹس میں بہتری دیکھنے میں آئی ہے۔

امریکی سٹاک ایکسچینج وال سٹریٹ میں بھی اس وقت مندی دیکھنے میں آئی جب امریکی فیڈرل ریزرو کے سربراہ جیروم پاول نے خبردار کیا کہ مہنگائی توقعات سے کہیں زیادہ بڑھ سکتی ہے۔ ادارے کی جانب سے مزید کہا گیا ہے کہ اس صورت حال کی وجہ سے مارکیٹ میں شرح سود میں بھی توقعات سے کہیں زیادہ اضافہ ہو سکتا ہے۔ نیویارک اور مغربی ٹیکساس میں تیل کی قیمتوں میں پانچ فیصد سے زیادہ کمی آئی ہے. جبکہ برینٹ خام تیک کی قیمت میں چار فیصد کمی آئی ہے۔ موڈرنا کی جانب سے جاری ہونے والے بیان کے بعد بننے والی صورت حال نے تشویش کی لہر دوڑا دی ہے کہ توانائی کا شعبہ کس قدر متاثر ہو سکتا ہے۔

خیال رہے کہ عالمی ادارہ صحت نے ممالک کو انتباہ کیا تھا کہ وہ سفری پابندیاں عائد نہ کریں کیونکہ سائنسدان جاننے کی کوشش کر رہے ہیں کہ موجودہ ویکسین کورونا کی نئی قسم سے کتنا تحفظ فراہم کرتی ہے۔