پاکستان افغانوں کو ترک نہیں کرے

پاکستان ضرورت کے اس وقت میں افغانوں کو ترک نہیں کرے گا: وزیر اعظم

وزیر اعظم عمران خان نے افغانستان میں بگڑتی ہوئی انسانی صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان ضرورت کے اس وقت میں افغانوں کو ترک نہیں کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں ہفتے کے روز وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ایپکس کمیٹی برائے افغانستان کا تیسرا اجلاس ہوا۔

اجلاس کے دوران وزیر اعظم نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ افغانستان میں انسانی بحران سے نمٹنے کے لیے دوست ممالک کے ساتھ دوطرفہ تعاون تلاش کریں۔ انہوں نے افغانستان کی بحالی اور ترقی میں مدد کے لیے ریلوے، معدنیات، فارماسیوٹیکل اور میڈیا کے شعبوں میں تعاون بڑھانے کی بھی ہدایت کی۔

یہ بھی پڑھیں: وزیر اعظم عمران خان بیجنگ اولمپکس کے افتتاحی تقریب میں شرکت کریں گے

یہ بھی پڑھیں: ہکلہ ڈیرہ اسماعیل خان موٹروے کا افتتاح، وزیراعظم کا پسماندہ علاقوں کی ترقی کا دعوٰی

اجلاس میں کمیٹی کو بتایا گیا کہ افغانستان اس سخت سردی کے دوران بھوک اور بحرانی صورتحال کے دہانے پر ہے جس کی وجہ سے لوگوں کے لیے مناسب خوراک اور رہائش کا حصول مشکل ہے۔

ایپکس کمیٹی نے عالمی برادری اور امدادی اداروں سے اپنی اپیل کی تجدید کی کہ وہ اس ضرورت کے موقع پر افغانستان کو امداد فراہم کریں تاکہ معاشی تباہی کو روکا جا سکے اور افغانستان میں قیمتی جانوں کو بچایا جا سکے۔