پختونخوا میں 8 ارب سرمایہ کاری

پختونخوا میں 8 ارب ڈالر سرمایہ کاری کی راہ ہموار

خیبرپختونخوا حکومت کے صوبائی وزیر صحت و خزانہ تیمور سلیم جھگڑا نے کہا ہے کہ دبئی ایکسپو میں پاکستان پویلین میں خیبرپختونخوا حکومت کی جانب سے بین الاقوامی سرمایہ کاروں کو صوبے میں سیاحت ثقافت کیساتھ ساتھ ہونے والی ترقی اور نئے پراجیکٹس کو ایکسپو کی تھیم کے مطابق بہترین انداز میں پیش کیا گیا جس سے سرمایہ کاروں نے اپنی دلچسپی کا اظہار کرتے ہوئے بین الاقوامی فرمز نے8بلین ڈالرز پر مشتمل 44 مفاہمتی یاداشت پر دستخط کئے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے دبئی ایکسپو 2020 میں خیبرپختونخوا حکومت کی جانب سے منعقدہ خیبرپختونخوا سرمایہ کاری کانفرنس میں بطور مہمان خصوصی شرکت کے دوران کیا۔

اس موقع پر صوبائی وزیر ثقافت شوکت یوسفزئی،ممبر صوبائی اسمبلی ضیاء اللہ بنگش، وزیراعلیٰ کے معاون خصوصی برائے صنعت عبدالکریم خان، دبئی میں تعینات پاکستان کے سفیر ایچ ای افضال محمود، ایڈیشنل چیف سیکرٹری شہاب علی شاہ، سیکرٹری محکمہ سیاحت خیبرپختونخواعامر سلطان ترین، ڈائریکٹر جنرل خیبر پختو نخوا کلچر اینڈٹورازم اتھارٹی کیپٹن (ر)کامران احمد آفریدی، سی ای او خیبرپختونخوا بورڈآف انویسٹمنٹ حسان دائود بٹ، مینجنگ ڈائریکٹر بینک آف خیبرمحمد علی گل فراز،ڈائریکٹر جنرل ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان رضوان طارق، پاکستان بزنس کونسل کے صدر سید قیصرانیس، پختونخوا بزنس اینڈ ویلفیئر کے صدر زبیر خان، الماسا گروپ، بارکلے گروپ آف کمپنی، سمارا گروپ آف کمپنیز، جنت اینڈ آر جے گروپ آف دبئی، مزایا گروپ سمیت مختلف سرمایہ کاری فرمز اور کمپنیز کے عہدیداران شریک تھے۔

صوبائی وزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑا نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور خصوصاً خیبرپختونخوا میں سیاحتی مقامات اور مواقع زیادہ ہیں۔ انٹیگریٹڈ ٹورازم زونز کا پراجیکٹ لارہے ہیں جس طرح دبئی نے اکنامک زون اور سیاحت کے شعبے میں ترقی کی اسی طرح خیبرپختونخوا حکومت بھی انٹرنیشنل ٹورازم کو صوبے میں لانے اور اس کے فروغ کیلئے تیار پراجیکٹس کو ایکسپو میں پیش کر کے سرمایہ کاری لا رہی ہے۔ خیبرپختونخوا پاکستان کاواحد صوبہ ہے جس نے پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کیساتھ مل کر اپنے وسائل سے پہلا موٹر وے پراجیکٹ سوات مکمل کیا جبکہ اس کے علاوہ ہائیڈروڈویلپمنٹ پراجیکٹس پر بھی تیزی سے کام ہو رہا ہے۔ سوات کے بعد ڈیرہ اسماعیل خان کیلئے موٹر وے بنانے جا رہے ہیں۔ خیبرپختونخوا میں رشکئی سپیشل اکنامک زون پاکستان میں برآمدات کا مرکز بنے گا۔

مزید دیکھیں :   پاراچنار ،غیر حتمی انتخابی فہرستیں عوام کیلئے ڈسپلے مراکز میں اویزاں

انہوں نے کہا کہ سنٹرل ایشیا کیساتھ فارن ایکس چینج میں یہ مددگار ثابت ہوگا۔ وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان کے وژن کے مطابق روزگار کے مواقع فراہم کرنے کیلئے پرائیویٹ سرمایہ کاروں کو خیبرپختونخوا لارہے ہیں۔ صوبے میں انفراسٹرکچر اور ٹورازم سیکٹر کو مزید بہتر بنا رہے ہیں۔ صوبائی وزیر ثقافت شوکت یوسفزئی نے کہا کہ صوبے میں سیاحت، انرجی اینڈپاوورسمیت دیگر شعبوں میں سرمایہ کاری کے بہترین مواقع موجود ہیں۔ ایکسپو میں صوبے میں سرمایہ کاری کیلئے بین الاقوامی فرمز کو بہترین انداز میں پراجیکٹس پیش کئے گئے۔ مفاہمتی یاداشت کے بعد ٹیکنیکل ٹیم کی بدولت ان فرمز کو صوبے میں سرمایہ کاری کیلئے جلد از جلد لایا جائے گا۔ صوبے میں بجلی کے منصوبے لگانے کی کافی گنجائش موجود ہے۔ ایکسپوکے ذریعے بین الاقوامی فرمز کو صوبے میں سرمایہ کاری کا بتایا گیا جس سے صوبے میں سرمایہ کاری کی راہ ہموار ہوئی اور اس طرح کی شرکت سے صوبے میں مزید سرمایہ کاری ممکن ہوگی۔ متحدہ عرب امارات میں تعینات پاکستان کے سفیر ایچ ای افضال محمود نے کہا کہ پاکستان پویلین میں خیبرپختونخوا حکومت نے بہترین انداز میں شرکت کرتے ہوئے اپنے پراجیکٹس پیش کئے جو کہ صوبے میں سرمایہ کاری کیلئے مددگار ثابت ہونگے۔ پاکستان پویلین کا شمار دبئی ایکسپو کے دیگر پویلین میں سے ٹاپ دس میں ہوتا ہے اور روزانہ ہزاروں کی تعداد میں سیاح پویلین کا دورہ کررہے ہیں۔ خیبرپختونخوا اور وفاقی حکومت ملک اور صوبے میں سرمایہ کاروں کو ہر ممکن سہولیات اور سپورٹ فراہم کرنے کیلئے تیار ہے۔ بین الاقوامی سرمایہ کاروں کو صوبے میں سرمایہ کاری سے فائدہ اٹھانے کیلئے بہترین موقع ہے۔

ایڈیشنل چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا شہاب علی شاہ نے کہا کہ حکومت ایڈمنسٹریشن سطح پر ہر ممکن سپورٹ فراہم کرنے کیلئے تیار ہے۔ ہم ایکسپو میں ان پراجیکٹس کو لیکر آئے ہیں جن کی فزیبلٹی رپورٹ مکمل ہیں ان میں صرف سرمایہ کاری کرنے کی ضرورت ہے۔ سیاحت، پاوور اینڈانرجی، زراعت، لائف سٹاک سمیت کئی شعبے ہیں جن میں سرمایہ کار اپنی سرمایہ کاری کرکے فائدہ اٹھا سکتے ہیں ۔ حکومت ون ونڈوسمیت کئی سہولیات سرمایہ کاروں کو فراہم کرنے کیلئے تیار ہے۔ ڈائریکٹر جنرل ٹورازم اتھارٹی کامران احمد آفریدی نے کہا کہ صوبے میں ٹورازم اتھارٹی کے قیام کا مقصد بھی یہ ہے کہ دبئی ایکسپو سمیت دیگر جگہوں سے سیاحت کے شعبے میں آنے والے سرمایہ کاروں کو ون ونڈو آپریشن کے تحت سہولیات فراہم کی جائے اور دبئی ایکسپو میں انٹیگریٹڈ ٹورازم زونز سمیت صوابی ہنڈ ری کری ایشنل پارک اور دیگر پراجیکٹس کو پیش کیا گیا۔

مزید دیکھیں :   پاراچنار ،غیر حتمی انتخابی فہرستیں عوام کیلئے ڈسپلے مراکز میں اویزاں

سی ای او خیبرپختونخوا بورڈ آف انویسٹمنٹ حسان داد بٹ نے خیبرپختونخوا سرمایہ کاری کانفرنس میں بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ یہ بہترین موقع ہے کہ خیبرپختونخوا میں صنعت، انرجی و پاوور، سیاحت، زراعت، فوڈ، لائف سٹاک سمیت دیگر شعبوں میں سرمایہ کاری کی جائے۔ ایکسپو میں شرکت سے قبل بورڈآف انویسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ اور ٹورازم اتھارٹی نے وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کی ہدایات پر کوششوں سے کانفرنس میں شرکت کیلئے تیاری کی اور وہ پراجیکٹس پیش کئے جن میں سرمایہ کاری جلد از جلد ممکن تھی۔ ٹیم کی کوششوں سے آج 44 مفاہمتی یاداشتوں پر مختلف بین الاقوامی فرمز اور دبئی میں موجود پاکستانی سرمایہ کاروں نے دستخط کئے۔ انہوں نے تمام بزنس کمیونٹی، خیبرپختونخوا حکومت، دبئی حکومت اور دیگر منسلک شعبوں کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے ایکسپو میں شرکت سمیت صوبہ میں سرمایہ کاری کیلئے ان تمام اقدامات کو ممکن بنایا۔