پاکستان کرپٹو کرنسی ویب سائٹس بند

پاکستان کا 1600 سے زائد کرپٹو کرنسی ویب سائٹس کو بند کرنے پر غور

وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) کے سائبر کرائم ونگ نے پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) کو 1600 سے زائد کرپٹو ٹریڈنگ ویب سائٹس تک رسائی کو روکنے کے لیے خط لکھا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ایف آئی اے کے ڈائریکٹر بابر بخت قریشی نے پیشرفت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ منی لانڈرنگ کے لیے کرپٹو کرنسی کا استعمال کیا جا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کرپٹو کرنسی میں ڈوبے 18 ارب واپس ملنے کی امید پیدا ہوگئی

یہ بھی پڑھیں: پاکستان میں کرپٹو کرنسی کے استعمال پر پابندی لگانے کا فیصلہ

ڈائریکٹر ایف آئی اے نے انکشاف کیا کہ کرپٹو کرنسی کی تجارت میں ملوث افراد کی فہرست تیار کی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان لوگوں کو گرفتار کیا جائے گا کیونکہ پاکستان میں کرپٹو کرنسی کی تجارت پر پابندی ہے۔

بابر بخت قریشی نے پاکستان میں کرپٹو کرنسیوں کو فروغ دینے کی مہم کی قیادت کرنے والے افراد کے خلاف کارروائی کا اشارہ دیتے ہوئے کہا کہ یہ لوگ ایجنسی کے ریڈار پر ہیں اور جلد ہی ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

دوسری جانب وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی شبلی فراز نے کہا ہے کہ پاکستان کا بلاک چین ٹیکنالوجی کو اپنانے کا منصوبہ ہے جو کرپٹو کرنسیز کے لیے ریڑھ کی ہڈی کا کام کرتی ہے۔

مزید دیکھیں :   پی آئی اے کا عازمین حج کیلئے 31 مئی سے13 اگست تک پروازوں کا اعلان