نواز شریف کو باہر بھیجنے

میاں نواز شریف کو باہر بھیجنے کا فیصلہ 100فیصد وزیر اعظم عمران خان کا تھا

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی و این سی او سی کے سربراہ اسد عمر نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن کے سربراہ نواز شریف کو باہر بھیجنے کا فیصلہ سو فیصد وزیر اعظم عمران خان کا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق وفاقی وزیر اسد عمر نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ جس میٹنگ میں سابق وزیراعظم نواز شریف کو باہر بھیجنے کا فیصلہ ہوا، میں اس میں شریک تھا۔ انہوں نے کہا کہ جس وقت یہ بحث ہوئی کمرے میں 6 سے 8 لوگ بیٹھے تھے جبکہ نواز شریف کو بھیجنے کا معاملہ پہلے کابینہ میں ڈسکس ہوا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: اقتصادی اصلاحات کی کامیابی کا بین الاقوامی سطح پر اعتراف کیا جا رہا ہے

یہ بھی پڑھیں: برآمدات کی راہ میں رکاوٹیں ڈالنے والے عناصر کے خلاف سخت کارروائی

اسد عمر کا کہنا تھا کہ نواز شریف کو باہر بھیجنے کا فیصلہ سو فیصد وزیر اعظم عمران خان کا تھا اور عمران خان نے یہ نہیں کہا کہ یہ فیصلہ ان کا نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی سینئر لیڈر شپ کمرے میں بیٹھی تھی اور نواز شریف کو باہر بھیجنےکے فیصلے پر سب کی رائے مختلف تھی۔

وفاقی وزیر منصوبہ بندی کے مطابق وزیر اعظم کا کہنا ہے کہ جن میڈیکل رپورٹس کی بنیاد پر وہ فیصلہ کیا گیا وہ جھوٹی ثابت ہوئیں۔

مزید دیکھیں :   پی آئی اے کا عازمین حج کیلئے 31 مئی سے13 اگست تک پروازوں کا اعلان