امریکی فوج یوکرین مطلب تیسری جنگ

امریکی فوج یوکرین میں بھیجنے کا مطلب تیسری عالمی جنگ ہوگا

امریکی صدر جوبائیڈن نے کہا ہے کہ امریکا روس سے براہ راست تصادم کے لئے اپنی فوج یوکرین نہیں بھیجے گا۔امریکا کے صدر جوبائیڈن نے بیان میں کہا کہ یوکرین میں امریکی فوجی بھیجنے کا مطلب تیسری عالمی جنگ ہوگا۔براہ راست تصادم سے بچنے کے لئے امریکی فوجی یوکرین میں نہیں بھیجے جائیں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ ہم نیٹو کا مکمل طاقت کے ساتھ دفاع کریں گے تاہم امریکا یوکرین میں روس سے جنگ نہیں کرے گا۔

نیٹو اورروس کے درمیان براہ راست تصادم کا مطلب تیسری عالمی جنگ ہوگا۔امریکی صدراس سے قبل بھی واضح کرچکے ہیں کہ یوکرین میں امریکی فوجی بھیجنے کی کوئی تجویز زیرغورنہیں ہے۔یوکرین پرروس کے حملے کے بعد امریکا اوردیگرممالک نے روس سے نئی پابندیاں عائد کی ہیں۔گذشتہ چند روز میں بائیڈن انتظامیہ نے روس اورروسی صدرولادی میرپوٹن کیخلاف خلاف سخت پابندیاں لگائی ہیں۔

مزید دیکھیں :   تباہ کن زلزلہ، ترکیہ و شام میں اموات کی تعداد 8 ہزار سے تجاوز کر گئی