ڈی چوک جلسہ

ڈی چوک جلسہ: کارکنان کے تصادم کی ذمہ دارحکومت ہوگی

ڈی چوک پرعدم اعتماد کے دن جلسہ کے متعلق نائب صدر پیپلز پارٹی سینیٹر شیری رحمان کہنا ہے کہ سیاسی جماعتوں کے کارکنان کے تصادم کی ذمہ دارحکومت ہوگی۔

شیری رحمان نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ ‏ڈی چوک پرعدم اعتماد کے دن جلسہ، ارکان کا گھیراؤ کی حکومتی منصوبہ بندی غیرآئینی ہے، حکومت کھلے عام کشیدگی کا اعلان کر رہی ہے۔

یہ بھی پڑھیے:فضل الرحمان کا ایجنڈا او آئی سی کانفرنس کے خلاف ہے

انہوں نے کہا ہے کہ ‏حکومت کے پاس نمبر پورے ہیں تو عدم اعتماد کو پارلیمان میں چیلنج کرے، وزیراعظم کے گھر جانے کا فیصلہ پارلیمان میں ہوگا، ڈی چوک پر نہیں۔ شیری رحمان نے مزید کہا کہ یہ پر اعتماد ہوتے تو ایک پارلیمانی اور آئینی معاملے کو ڈی چوک پرنہ لے جاتے، تحریک انصاف کی سیاست ڈی چوک سے شروع ہوئی تھی ختم بھی وہیں ہوگی۔

مزید دیکھیں :   عمران خان کے اعلان کے بعد کے پی کے رکن اسمبلی نے استعفٰی دے دیا