پتوکی محنت کش کی ہلاکت

پتوکی: محنت کش کی ہلاکت، انتظامیہ نے ایکشن لے لیا


پتوکی میں باراتیوں کے مبینہ تشدد سے پاپڑ فروش کے جاں بحق ہونے کے معاملہ پر انتظامیہ نے ایکشن لے لیا۔

وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار کے نوٹس کے بعد پتوکی انتظامیہ نے شادی ہال کو سیل کردیا۔ پتوکی، پاپڑ فروش باراتیوں کے تشدد سے جاں بحق، باراتی کھانا کھاتے رہے دوسری جانب اسسٹنٹ کمشنر نے مقتول کے گھر جا کر اہل خانہ سے اظہار افسوس کیا۔ اسسٹنٹ کمشنر کی جانب سے متاثرہ فیملی کو انصاف کی یقین دہانی کروائی گئی اور مالی امداد کا وعدہ بھی کیا گیا۔

یاد رہے کہ قصور کی تحصیل پتوکی میں حیوانیت کا ایک اور دلخراش واقعہ پیش آیا، گزشتہ دنوں چوری کے الزام میں باراتیوں کے مبینہ تشدد سے جاں بحق پاپڑ فروش کی نعش زمین پر پڑی رہی، بے حس باراتی کھانا کھانے میں ممصروف رہے۔

پاپڑ فروش اشرف عرف سلطان کی پتوکی کے شادی ہال میں ہلاکت کے معاملے پر اشرف کے برادر نسبتی پرویز نے پولیس کو بتایا کہ وہ ساتھیوں کے ساتھ موٹرسائیکل پر شادی ہال کے باہر سے گزر رہا تھا۔اس نے دیکھا کہ شادی ہال میں کچھ باراتی پاپڑ بیچنے پر اشرف کو ٹھڈوں اور مکوں سے مار رہے ہیں، انہوں نے چھڑانے کی کوشش کی مگر ملزم باز نہ آئے، اسی دوران اشرف زمین پر گر گیا، ریسکیو ٹیم نے آکر اشرف کی موت کی تصدیق کردی۔

پولیس نے پرویز کی مدعیت میں مقدمہ درج کرکے شادی ہال منیجر وقاص سمیت 12 افراد کو حراست میں لے لیا۔

مزید دیکھیں :   18سالہ افغان مزدور کاقتل جائیدادتنازعے کا شاخسانہ نکلا