سپریم کورٹ سےفیصلہ آنے پر لانگ مارچ کی تاریخ دوں گا،عمران خان

اسلام آباد: (مشرق نیوز) سابق وزیراعظم اور پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نیشنل کونسل اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انٹرا پارٹی الیکشن کرائے تو بڑے مسئلے آئے، دوسری پارٹیوں میں تو انٹرا پارٹی الیکشن ہی نہیں کرائے جاتے، وعدہ ہے پارٹی میں الیکشن کرا کر میرٹ لائیں گے۔ فیملی پارٹیوں کی وجہ سے ملک میں جمہوریت نہیں بڑھی، فیملی پارٹیوں میں دوخاندان ہے، پچھلے 60 سالوں میں فوج اور دو خاندانوں نے حکمرانی کی، ملک کے حالات ان لوگوں نے خراب کیے، ہماری حکومت توساڑھے تین سال رہی۔ ہمارے دور میں معاشی گروتھ6 فیصد پر تھی، بیرونی قوتیں نہیں چاہتی تھیں کہ پاکستان مضبوط ہو۔ بیرونی سازش کے تحت 30 سال کرپشن کرنے والوں کومسلط کیا گیا۔ ہماری حکومت میں فضل الرحمان، بلاول بھٹونے مہنگائی مارچ کیے کسی کونہیں روکا تھا، تین روپے پٹرول بڑھنے پر بلاول نے مہنگائی مارچ کیا تھا۔ موجودہ حکومت نے2 ماہ میں پٹرول60 روپے مہنگا کردیا۔ اگر اِن کو مہنگائی کی فکر ہوتی تو روس سے سستا تیل لیتے، یہ لوگ امریکا کی اجازت کے بغیر کچھ نہیں کریں گے۔
عمران خان کا کہنا تھا اب یہ لوگ مرضی کی حلقہ بندیاں کرکے الیکشن جیتنے کی تیاری کررہے ہیں۔ کسی کو بھی الیکشن کمیشن پراعتماد نہیں ہے، حلقہ بندیوں پربہت ساری شکایات آ رہی ہیں، یہ چور کو اقتدارمیں رہ کر تمام اداروں کی تباہی کریں گے۔ جس طرف ہمارا ملک جارہا ہے اس سے عوام کو فائدہ نہیں ہو رہا، دشمنوں کا ایجنڈا پاکستان کے ٹکڑے کرنا ہے۔ ہم نے پورا زور لگانا ہے، عدالت سے قانون کے اندررہ کراجازت مانگ رہے ہیں، فیصلہ آنے پر لانگ مارچ کی تاریخ دوں گا۔

مزید دیکھیں :   سیلاب متاثرین کورقوم کی ادائیگی بائیومیٹرک تصدیق کے بعدہوگی