میرا ڈونا کی موت

میرا ڈونا کی موت،غفلت برتنے والے 8 رکنی طبی عملے پر مقدمہ چلایا جائیگا

لیجنڈری ارجنٹائنی فٹبالر ڈیاگو میراڈونا کی موت میں آٹھ رکنی طبی عملے پر مجرمانہ غفلت کے الزام میں مقدمہ چلایا جائے گا۔

یہ حکم جج نے مجرمانہ قتل کے مقدمے میں اس وقت دیا ہے جب ایک میڈیکل پینل نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ میراڈونا کے علاج بے ضابطگیاں پائی گئی ہیں۔میراڈونا نومبر 2020 میں بیونس آئرس میں دل کا دورہ پڑنے سے 60 سال کی عمر میں انتقال کر گئے تھے ۔

میراڈونا دماغ میں خون کے جمنے کی سرجری کے بعد گھر میں ہی زیر علاج تھے۔

میراڈونا کی موت کے چند دن بعد ارجنٹائن کے استغاثہ نے اس کی دیکھ بھال میں شامل ڈاکٹروں اور نرسوں کے خلاف تحقیقات شروع کیں۔تحقیقات کرنے والے میڈیکل پینل نے یہ بھی نتیجہ اخذ کیا کہ عدالتی فیصلے کے مطابق، فٹ بالر کو مناسب طبی سہولت میں مناسب علاج کے ساتھ بچایا جاسکتا تھا۔

مزید دیکھیں :   یورپی انڈر 19 فٹبال چیمپئن شپ، فائنل میں انگلینڈ اور اسرائیل کا ٹکرائو

الزامات کا سامنا کرنے والوں میں میراڈونا کے نیورو سرجن اور ذاتی ڈاکٹر، لیوپولڈو لوک ایک ماہر نفسیات، دو ڈاکٹر، دو نرسیں اور ان کا باس شامل ہیں۔ ان سب نے اس کی موت کی ذمہ داری سے انکار کیا ہے۔تمام آٹھ افراد پر قتل کی قانونی تعریف پر مقدمہ چلایا جائے گا جس کی بنیاد اس علم میں لاپرواہی کی گئی ہے کہ اس سے کسی شخص کی موت واقع ہو سکتی ہے۔