پشاور بورڈ نے میٹر ک نتائج کااعلان کردیا

پشاور بورڈ نے میٹر ک نتائج کااعلان کردیا،طالبات بازی لے گئیں

ویب ڈیسک : ابتدائی و ثانوی تعلیمی بورڈ پشاور کے تحت جماعت دہم کے سالانہ امتحانات برائے سال2022 ء کے نتائج کا اعلان کر دیا گیا ہے جس کے مطابق سائنس گروپ میں فریال راشد اور مزنہ عالم نے1100 میں سے 1089 نمبر لیکر مجموعی طور پر پہلی پوزیشن حاصل کی ہے ۔ مریم بی بی ، مشال سبحان اور سید حما د علی شاہ نے 1088 نمبر لے کر دوسری پوزیشن جبکہ درمر جان ، زرلخت ، فاطمہ زرلال اور کنول اختر نے 1087 نمبر لے کر تیسری پوزیشن حاصل کی ہے ۔

اسی طرح آرٹس گروپ میں سائرہ گل نے 1043 نمبر لے کر پہلی پوزیشن حاصل کی ہے ۔ حافظہ عمامہ سید 1030 نمبروں کے ساتھ دوسری پوزیشن جبکہ سیدہ حلیمہ مسعود 1004 نمبروں کے ساتھ تیسری پوزیشن حاصل کرنے میں کامیاب ہو ئیں ۔ مجموعی طور پر 80044 طلبہ نے امتحان میں شرکت کی جن میں سے 67246 طلبہ کامیاب ہوئے اور کامیابی کی مجموعی شرح84 فیصد رہی ہے۔

نتائج اعلان کی تقریب بدھ کے روزوزیراعلیٰ ہائوس میں منعقد ہوئی جس کے مہمان خصوصی وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان تھے۔صوبائی وزیر برائے ابتدائی و ثانوی تعلیم شہرام خان ترکئی ، وزیراعلیٰ کے معاون خصوصی بیرسٹر محمد علی سیف ، متعلقہ انتظامی سیکرٹریز ، چیئرمین پشاور،سوات اور مردان بورڈ ز ، پوزیشن ہولڈرز طلبہ اور اُن کے والدین اور اساتذہ نے تقریب میں شرکت کی ۔ تقریب میں وزیراعلیٰ نے پشاور بورڈ کے پوزیشن ہولڈرز کو اعزازی شیلڈز اور انعامات دیئے ۔ اس موقع پر محمود خان نے سوات بورڈ کے میٹرک اور انٹر کے سالانہ امتحانات برائے سال2020-21 میں نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے طلبہ میں بھی میڈلزاور دیگر انعامات تقسیم کئے ۔

مزید دیکھیں :   پاپائے روم فرانس کی روس اور یوکرین سے تشدد اور موت کا سلسلہ بند کرنے کی اپیل

وزیراعلیٰ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نمایاں کارکردگی دکھانے والے طلبہ ، اُن کے والدین ، اساتذہ اور سکول انتظامیہ کو مبارکباد پیش کی ہے اور کہا ہے کہ یہ بچے ہماری قوم کا مستقبل ہیں اور ہم اپنے بچوں کو پڑھانا اور اُنہیں دُنیا کے دیگر ممالک کے بچوں کے برابر لانا چاہتے ہیں اور اس مقصد کیلئے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے تعلیم کے شعبے میں اصلاحات کا ایک سلسلہ شروع کر رکھا ہے ۔ اُنہوںنے کہاکہ اُن کی حکومت کیلئے تعلیم کا شعبہ سب سے اہم ہے کیونکہ اس سے ہماری آنے والی نسلوں کا مستقبل جڑا ہے ۔ اُنہوںنے کہاکہ تعلیم کے شعبے کو مستحکم کرنے کیلئے مربوط اقدامات کا سلسلہ جاری ہے اور اصلاحات کا یہ سلسلہ آئندہ بھی جاری رہے گا۔

سرکاری سکولوں میں سیکنڈ شفٹ کا اجراء ہماری حکومت کا ایک اہم قدم ہے جس کے بہت اچھے نتائج سامنے آرہے ہیں۔ اُنہوں نے کہا سیکنڈ شفٹ کو کامیاب بنانے کے سلسلے میں محکمہ تعلیم کی پوری ٹیم کی کارکردگی قابل تحسین ہے ۔ اُنہوںنے کہاکہ سرکاری سکولوں میں نئے فرنیچر کی فراہمی کے علاوہ سکولوں کو شمسی توانائی پر منتقل کیا جارہا ہے ۔ اس کے علاوہ ان سکولوں میں ناپید سہولیات کی فراہمی کو بھی یقینی بنایا جارہا ہے ۔

مزید دیکھیں :   ایک ہفتے سے پشاورکی ہواسب سے زیادہ آلودہ

محکمہ تعلیم کے مختلف اُمور کو ڈیجیٹائز کیا جارہا ہے ۔ وزیراعلیٰ نے بورڈ ز انتظامیہ کو بھی ہدایت کی ہے کہ تعلیمی بورڈز کے جملہ اُمور کو ڈیجیٹلائز کیا جائے تاکہ طلبہ کو زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کی جا سکیں۔ اُنہوںنے کہا پشاور بورڈ کو مادر بورڈ کا درجہ دینے پر غور ہو رہا ہے جبکہ مادر بورڈ کے قیام سے صوبہ بھر کے امتحانی نظام میں یکسانیت آئے گی۔تقریب سے صوبائی وزیر تعلیم شہرام خان ترکئی اور دیگرنے بھی خطاب کیا ۔