عمران خان

ملک سیلاب میں ڈوبا ہوا ہے اور وزیراعظم باہر دورے کر رہے ہیں،عمران خان

موجودہ حکومت نے کسانوں کا معاشی قتل کیا، برآمدات گر رہی ہیں، صنعت بند ہو رہی ہے اور بے روزگاری بڑھ رہی ہے، ملک سیلاب میں ڈوبا ہوا ہے اور وزیراعظم باہر دورے کر رہے ہیں،عمران خان
چکوال میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ میں نے قوم کو ان ‘چوروں’ کے خلاف کال دینی ہے، یہ سمجھے تھے کہ میں چپ کرکے بیٹھ جاؤں گا، ان کو پتا ہونا چاہیے تھا کہ میں اپنے پیروں پر کھڑا ہوکر اس مقام پر پہنچا ہوں۔
چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ شہبازشریف کی بےحسی دیکھیں، ان حالات میں وہ باہر دورےکر رہے ہیں، کونسا معرکہ مارنا ہے باہر ؟ جب ملک میں اتنا بڑا سیلاب آیا ہوا ہے۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ یہ باہر لے جایا گیا پیسا آدھا بھی واپس لائیں توپاکستان کوپیسا نہ مانگنا پڑے، روسی صدر پیوٹن کے سامنے شہباز شریف کی کانپیں ٹانگ رہی تھیں،
کسی وزیراعظم کویہ باتیں نہیں کرتے دیکھا جو شہبازشریف نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل سےکیں، شہباز شریف سیکرٹری جنرل سے پیسے مانگ رہے تھے۔
ان کا کہنا تھا کہ سیکرٹری جنرل یو این کو علم ہےکہ اس کابینہ کے 60 فیصد وزیر ضمانت پر ہیں، اسےعلم ہے ان پر کرپشن کےکیسز ہیں، سیکرٹری جنرل کو سب پتا ہے اس لیے وہ پیسا نہیں دے رہا۔
انہوں نےکہا کہ شہباز شریف نے بیان حلفی دیا تھا کہ نوازشریف واپس آئیں گے، نواز شریف کی بیٹی نے زندگی میں ایک گھنٹہ کام نہیں کیا، چوہدری نثار ن لیگ سے الگ ہی اس لیے ہوئےکہ کہاں چوہدری نثار اور کہاں مریم نواز، پیپلزپارٹی میں بھی میرٹ ہوتا تو چیئرمین اعتزاز احسن ہوتے بلاول نہیں۔

مزید دیکھیں :   ریکوڈک کیس، وفاقی کابینہ کی ریفرنس بھیجنے کی منظور