انڈونیشیا میں آج 5.6 شدت کا زلزلہ ریکارڈ کیا گیا۔ مغربی جاوا صوبے میں زلزلے سے 56 افراد ہلاک اور 700 سے زائد زخمی ہوئے

انڈونیشیا میں زلزلے سے ہلاکتوں کی تعداد میں حیران کن اضافہ

ویب ڈیسک: انڈونیشیا میں زلزلے سے ہلاکتوں کی تعدادمزید اضافہ ہوا ہے ۔اب تک حلاکتوں کی تعداد 162ہوگئی ہیں ۔انڈونیشیا میں 5.6 شدت کے زلزلے سے زخمیوں کے میں تعداد ا700سے زائد ہوئی ہے۔ زلزلے سے سے زائد مکانات کو نقصان پہنچا ہے۔ ہزار 3 سو سے زائد افراد بے گھر ہوئے ہیں۔زلزلہصوبہ مغربی جاوا میں آیا تھاجس کے جھٹکے انڈونیشین دارالحکومت جکارتہ تک محسوس کییگئے تھے۔امریکی جیولوجیکل سروے کے مطابق زلزلے کا مرکز دارالحکومت جکارتہ سے 75 کلومیٹر کے فاصلے پر جنوب مشرق کی جانب واقع قصبے سیانجر میں 10کلومیٹر کی گہرائی میں تھا۔
زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں بجلی کی فراہمی معطل ہے اور مواصلات کا نظام متاثر شدید متاثر ہے۔مقامی میڈیا رپورٹ کے مطابق زلزلے کے جھٹکوں سے جکارتہ میں بھی متعدد عمارات 3 منٹ تک لرزتی رہیں اور کچھ کو خالی بھی کرایا گیا۔خیال رہے کہ انڈونیشیا رنگ آف فائر یعنی مسلسل زلزلے اور آتش فشاں کے دھماکوں والے علاقے میں آباد ہے۔فروری 2022 میں 6.2 شدت کے زلزلے سے مغربی سماٹرا میں 25 افراد ہلاک اور 460 زخمی ہوگئے تھے۔جنوری 2021 میں صوبے مغربی Sulawesi میں 6.2 شدت کے زلزلے سے 100 سے زیادہ افراد ہلاک اور ساڑھے 6 ہزار کے قریب زخمی ہوئے تھے۔انڈونیشیا میں 2004 میں آنے والی تباہ کن سونامی کے نتیجے میں ایک لاکھ 20 ہزار افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

مزید دیکھیں :   ارشد شریف قتل کیس: سپریم کورٹ کے حکم پر سپیشل جے آئی ٹی تشکیل