فوری مہم جوئی سے اجتناب

نواز،زرداری اورمولانا کا پنجاب میں فوری مہم جوئی سے اجتناب کافیصلہ

ویب ڈیسک : نواز شریف، آصف زرداری اور مولانا فضل الرحمٰن کے درمیان رابطہ ہوا ہے،تینوں رہنمائوں نے پنجاب کی سیاسی صورتحال پر مشاورت کی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف،سابق صدر آصف زرداری اور سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمٰن کے درمیان رابطہ ہوا،ذرائع کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ تینوں رہنمائوں نے دیگر اتحادیوں کو بھی اعتماد میں لانے کا فیصلہ کیا ہے،اس موقع پر پنجاب میں فوری کسی بھی مہم جوئی سے اجتناب کا فیصلہ بھی کیا گیا۔
دوسری جانب حکومت نے پنجاب میں گورنر راج کے بجائے ان ہائوس تبدیلی کا فیصلہ کیا ہے،پی ڈی ایم جماعتیں پنجاب میں ان ہائوس تبدیلی کیلئے اعتماد کے ووٹ کا آپشن استعمال کریں گی۔ حکومتی ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ ان ہاس تبدیلی کیلئے تحریک عدم اعتماد نہ لائے جانے کا امکان ہے،پنجاب میں ان ہاس تبدیلی کیلئے اعتماد کے ووٹ کا آپشن استعمال کیا جائے گا اور اس حوالے سے آصف زرداری کو ٹاسک دے دیا گیا ہے۔ پی ٹی آئی اور ق لیگ کا اتحاد اگر اعتماد کا ووٹ نہ لے سکا تو وزیر اعلٰی پنجاب کا انتخاب دوبارہ ہو گا جبکہ ق لیگ کے چھ ارکان کی چوہدری شجاعت کے کیمپ میں واپسی گیم چینجر بن سکتی ہے۔

مزید دیکھیں :   بنوں ڈویژن کے 3قبائل کا دریافت شدہ گیس پر کام بند رکھنے کا اعلان