شیرگڑھ میں مستورات تنازعہ

شیرگڑھ میں مستورات تنازعہ، بہنوئی کے ہاتھوں سالاقتل

ویب ڈیسک : تھانہ لوند خوڑ کی حدود دھندیا میں مستورات کے تنازعہ پر بہنوئی نے فائرنگ کرکے سالے کو قتل کر دیا۔ فائرنگ سے راہ گیر بھی زخمی ہو گیا۔ ملزم کی بجائے مقتول کے بھائی کو گرفتاری پر شہری تھانے پہنچ گئے اور شدید احتجاج کیا۔ ڈی ایس پی سرکل تخت بھائی کی شفاف ایف آئی آر کی یقین دہانی پر مظاہرین منتشر ہوگئے۔
پیر کے روز روز لوند خوڑ کے علاقہ دھندیا میں مستورات کے تنازعہ پر ملزمان اسلام اکبر، خیر الاکبر، علی اصغر پسران فضل اکبر ساکنان ڈھوڈا بابا بمعہ شکیل ولد وکیل شاہ ساکن دھندیا نے فائرنگ کرکے وسیم ولد رحیم سید کو قتل کردیا۔ فائرنگ سے راہ گیر صفی اللہ شدید زخمی ہو گیا ۔ مقتول کے بھائی واصل ولد رحیم سید نے اپنی رپورٹ میں پولیس کو بتایا کہ ہم اپنے گھر میں موجود تھے کہ اس دوران ملزموں نے آکر گھر کا دروازہ کھٹکھٹایا جب ہم باہر نکلے تو ملزموں نے ہم پر تشدد کے بعد فائرنگ شروع کردی۔
فائرنگ کی زد میں آکر میرا بھائی وسیم موقع پر جاں بحق ہوگیا جبکہ راہ گیر صفی اللہ شدید زخمی ہوگیا۔ پولیس نے ملزموں کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے۔ پولیس نے ملزموں کو پکڑنے کی بجائے الٹا مقتول کے بھائی کو گرفتار کر لیا اور تھانہ میں بند کر دیا جس پر عوام شدید احتجاج کرتے ہوئے تھانے کے سامنے پہنچ گئے۔ اطلاع ملنے پر ڈی اس پی سرکل تخت بھائی بشیر احمد یوسفزئی موقع پر پہنچ گئے۔ انہوں نے مظاہرین کو یقین دہانی کروائی کہ ملزموں کے خلاف شفاف ایف آئی آر درج کی جائے گی جس پر مظاہرین پر منتشر ہو گئے۔

مزید دیکھیں :   پاکستان کلمے کے نام پر بنا، اس کی ترقی و خوشحالی اللہ کے ذمے ہے، اسحاق ڈار