نجی اشتراک والے سرکاری ہسپتالو ں

نجی اشتراک والے سرکاری ہسپتالو ں کامالی بحران سنگین ہوگیا

ویب ڈیسک : نجی اشتراک سے چلنے والے مختلف سرکاری ہسپتالوں کو فنڈز کی ادائیگیوں میں تاخیر سے پیدا ہونے والے مسائل اور شدید مالی بحران پر ہیلتھ فائونڈیشن کی جانب سے محکمہ خزانہ کو پیسے جاری کرنے کی درخواست کردی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق مختلف قبائلی اضلاع میں محکمہ صحت کے ہسپتالوں کو این جی اوز کے اشتراک سے چلانے کے معاہدے کئے گئے ہیں اس تناظر میں محکمہ صحت نے مذکورہ ہسپتالوں کے لئے آپریشنل اور تنخواہوں وغیرہ کی مد میں پیسے مختص کئے ہیں لیکن کئی ماہ کی سروس کے بعد بھی یہ پیسے ہسپتالوں کو منتقل نہیں کئے گئے ہیں جس کی وجہ سے ملازمین کی تنخواہ اور دیگر اخراجات کے سلسلے میں مالی مسائل پیدا ہورہے ہیں۔
اس سلسلے میں ہیلتھ فائونڈیشن کے منیجنگ ڈائریکٹر نے رابطہ پر بتایا کہ مذکورہ ہسپتالوں سے مشروط طور پر معاہدہ کیا گیا تھا اور پہلے کوارٹرز کے فنڈز کیلئے کارکردگی سے متعلق متعین اعشاریوں کا ہدف مقرر تھا ان ہسپتالوں سے یہ تمام تفصیلات موصول ہونے کے بعد محکمہ خزانہ کو فنڈز کی کلیئرنس کی درخواست کردی ہے۔ متعلقہ ڈیپارٹمنٹ سے پیسے جاری ہونے کے بعد ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسرز کے ذریعے جون تک کے اخراجات کے فنڈز پہلے مرحلہ پر منتقل کئے جائیں گے اور مزید کلیرنس کے بعد دوسرے کوارٹر کے فنڈز جاری کر دئیے جائیں گے۔

مزید دیکھیں :   تباہ کن زلزلہ، ترکیہ اور شام میں جانبحق ہونے والوں کی تعداد 12 ہزار کے قریب ہوگئی