ایلون مسک کی دولت میں کمی کانیاریکارڈقائم ہوگیا

ویب ڈیسک :دنیا کے سب سے امیر آدمی ایلون مسک کوکاروباری معاملات میں اتنا بھاری مالی نقصان اٹھانا پڑا کہ نیا ریکارڈ بن گیا۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹرکے مالک اور اسپیس ایکس کے بانی ایلون مسک نے ذاتی دولت میں کمی کا نیا ریکارڈ قائم کردیا۔گنیز ورلڈ ریکارڈز کی ویب سائٹ کے مطابق نومبر 2021سے دسمبر2022کے دوران ایلون مسک کی دولت میں165ارب ڈالر کی کمی ہوئی تاہم خدشہ ہے کہ ایلون مسک کو ہونے والا مالی نقصان اس کہیں زیادہ ہے۔ایلون مسک نے گزشتہ برس ٹوئٹرکو 44 ارب ڈالرمیں خریدا تھا جس کے بعد ان کی الیکٹرک گاڑیاں بنانے والی کمپنی ٹیسلا کے شیئرزمیں گراوٹ آگئی تھی۔
اس سے قبل ذاتی دولت میں سب سے بڑے نقصان کاریکارڈ سنہ2000میں جاپانی ٹیکنالوجی سرمایہ کار مسایوشی سون کے پاس تھا جنھیں58.6ارب ڈالر کا نقصان ہواتھا۔دسمبر میں ایلون مسک دنیا کے امیر ترین شخص کی پوزیشن سے محروم ہوگئے تھے۔ ان کی جگہ فرانسیسی لگژری اشیا کی کمپنی لوئی ووٹون کے چیف ایگزیکٹیو برنارڈ آرنلٹ نے لے لی تھی۔امریکی بزنس میگزین فوربز کے مطابق ایلون مسک کی دولت 178ارب ڈالر ہے جبکہ برنارڈ آرنلٹ کی دولت کا اندازہ 188ارب ڈالر تک لگایا جا رہا ہے۔

مزید دیکھیں :   افغان مہاجرین سے متعلق پالیسی پرنظرثانی کافیصلہ