رانا ثناء اللہ نے چھ سات وزرا کے مستعفی ہونے کی تجویز دیدی

ویب ڈیسک : وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ پارلیمانی بورڈ سے متعلق نوازشریف نے نام تقریباً فائنل کرلیے، پارلیمانی بورڈ فیصلے کرے گا کہ کہاں سے کس نے الیکشن لڑنا ہے، پارلیمانی بورڈ کی صدارت میاں نواز شریف خود کریں گے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثناء اللہ نے کہا کہ ن لیگ الیکشن میں بھرپور تیاری کے ساتھ حصہ لے گی، الیکشن سے متعلق ابتدائی انتظامات اور معاملات پر نوازشریف نے مشاورت کی، نواز شریف نے پاکستان میں بھی لوگوں سے ویڈیو لنک پر مشورہ کیا۔
رانا ثناء نے کہا کہ امیدوار کو ٹکٹ پارلیمانی بورڈ دے گا، ماضی میں بھی ہر امیدوار کا انٹرویو نواز شریف کرتے تھے، ہماری تجویز ہے کہ الیکشن مہم کے لیے چھ، سات وزراء اپنے عہدے سے استعفیٰ دیں۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ مریم نواز لندن سے 26 جنوری کو روانہ ہوکر 27 جنوری کو پاکستان پہنچیں گی، یکم فروری سے مریم نواز پنجاب اور کے پی میں الیکشن سے متعلق سیاسی سرگرمیاں شروع کریں گی.انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی واپسی سے متعلق قانونی موشگافیوں کو فائنل کیا جا رہا ہے، نواز شریف کی باعزت واپسی ہوگی۔
رانا ثناء ا للہ نے کہا کہ میرے خلاف ایک ادارے کا سربراہ آرمی چیف کی مرضی کے بغیر کیس بنا سکتا تھا، میں نے قمر جاوید باجوہ سے بھی کہا تھا کہ آپ نے یہ زیادتی کی۔وزیر داخلہ نے کہا کہ میری تجویز ہے کہ نواز شریف لاہور آئیں فقیدالمثال استقبال ہوگا، نواز شریف کا استقبال بتا دے گا کہ عمران خان کی مقبولیت جھوٹ ہے، نواز شریف واپس آئیں گے تو 9 ڈویعن میں9 جلسے ہوں گے اور الیکشن کی فضا تبدیل ہو جائے گی۔ رانا ثناء نے کہا کہ ہم نے اداروں کو کہا ہے کہ معاملات کی تحقیقات کریں اگر ثبوت ہیں تو گرفتار کریں۔

مزید دیکھیں :   تباہ کن زلزلہ، ترکیہ و شام میں اموات کی تعداد 8 ہزار سے تجاوز کر گئی