نگران وزیراعلیٰ بلوچستان

نگران وزیراعلیٰ بلوچستان کا تقرر بدستور ڈیڈ لاک کا شکار

ویب ڈیسک: بلوچستان میں نگران وزیراعلیٰ کی تقرری کا معاملہ ڈیڈ لاک کا شکار ہوگیا، ایوان سربراہان کی بیٹھک ناکام ہو جانے کے بعد اس اہم کام کیلئے پارلیمانی کمیٹی بھی قائم نہ ہوسکی۔ بلوچستان اسمبلی کی تحلیل کے تین دن مکمل ہونے کے بعد وزیراعلیٰ عبدالقدوس بزنجو اور اپوزیشن لیڈر ملک سکندر نگران وزیراعلیٰ کے لیے کسی ایک نام پر متفق نہیں ہوسکے تھے جس کے بعد معاملہ پارلیمانی کمیٹی کے سپرد ہوگیا ہے۔ سپیکر بلوچستان اسمبلی کی جانب سے 6 رکنی پارلیمانی کمیٹی تشکیل دی جانی تھی جس کے لیے وزیراعلیٰ اور اپوزیشن لیڈر کی جانب سے 3، 3 نام سپیکر کو بھجوا دیے گئے تاہم اپوزیشن کی دو جماعتوں نے اس نامزدگی پر اعتراضات اٹھائے ہیں، اگرچہ اپوزیشن لیڈر کی جانب سے طریقہ کار کو ملحوظ خاطر رکھا گیا ہے لیکن قانونی و تکنیکی پیچیدگیوں کا جائزہ لیا جارہا ہے۔ ان وجوہات کی بناء پر کمیٹی کا نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا جاسکا۔

مزید پڑھیں:  سپریم جوڈیشل کونسل سے چیف الیکشن کمیشن کیخلاف ایکشن لینے کا مطالبہ