شاہ محمود قریشی سائفر کیس میں گرفتار

وائس چیئرمین تحریک انصاف شاہ محمود قریشی سائفر کیس میں دوبارہ گرفتار

ویب ڈیسک: تحریک انصاف کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی کو سائفر کیس میں اسلام آباد میں ان کی رہائش گاہ سے پولیس کی بھاری نفری نے گرفتار کر لیا جس کے بعد انہیں ایف آئی اے ہیڈ کوارٹرز منتقل کیا جا رہا ہے۔ یاد رہے کہ اس سے قبل وہ دو بار سائفر تحقیقات میں ایف آئی اے کے روبرو پیش ہوئے اور سائفر سے متعلق بیان ریکارڈ کرا چکے ہیں۔
خیال رہے کہ کچھ دیر قبل شاہ محمود قریشی نے نیشنل پریس کلب اسلام آباد میں پریس کانفرنس کی تھی اور اعلان کیا تھا کہ 90 دن میں انتخابات اور مردم شماری سے متعلق مشترکہ مفادات کونسل کے فیصلوں کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا جائے گا۔ اس پریس کانفرنس مِیں ان کا کہنا تھا کہ چیئرمین پی ٹی آئی کی جگہ کوئی نہیں لے رہا، ان کا کوئی متبادل نہیں ہوسکتا، چیئرمین پی ٹی آئی سے متعلق کسی کو خام خیالی ہے تو وہ دور ہو جائے گی۔ وائس چیئرمین کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم حکومت نے غفلت سے ملک کو آئینی بحران میں دھکیل دیا، 90 دن میں انتخابات کے تاخیری فیصلے سے ڈیڈ لائن عبور ہوتی دکھائی دے رہی ہے، اگر بروقت انتخابات نہ ہوئے تو سینیٹ انتخابات متاثر ہونگے کیونکہ آدھی سینیٹ کو مارچ میں منتخب ہونا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نئے صدر کی تعیناتی کے لیے بھی قانونی پیچیدگیاں ہوں گی۔

مزید پڑھیں:  وفاقی کابینہ اجلاس میں تحریک انصاف پر پابندی زیرغور نہیں لائی گئی