سرکاری اہلکار کے بیٹے لڑکی سے زیادتی

پشاور، سرکاری اہلکار کے بیٹے کی لڑکی سے زیادتی

ویب ڈیسک: فقیرآباد میں سرکاری اہلکار کے بیٹے نے شادی کا جھانسہ دیکر جوانسال لڑکی کو اغواء کر لیا اور اسے زیادتی کا نشانہ بنا دیا، ملزم کم عمر لڑکی کو سوات بھی لے گیا تھا جسے پولیس نے گرفتار کر کے حوالات میں بند کر دیا۔ مسماة (س) سکنہ حسن گڑھی نے پولیس کو بتایا کہ 13 اگست کو اس کی 13 سالہ بیٹی گھر سے نکل کر لاپتہ ہو گئی تھی۔
پانچ روز گزرنے کے بعد وہ گھر آئی اور بتایا کہ ایک سرکاری اہلکار کے بیٹے اسد ولد اسلام نے اسے بہلا پھسلا کر اغواء کر لیا تھا اور اسے شادی کا جھانسہ دیکر سوات اور دیگر مقامات پر لے گیا اور وہاں اسے زیادتی کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے بتایا کہ ملزم نے شادی سے انکاری ہو کر اسے گھر کے قریب چھوڑ دیا۔ پولیس نے ملزم کے خلاف اغواء، چائلڈ پروٹیکشن ایکٹ اور زیادتی کے مقدمات درج کر کے اسے گرفتار کر لیا جس سے مزید تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔

مزید پڑھیں:  ڈیرہ اسماعیل خان میں پہلی خاتون ڈپٹی کمشنر تعینات