فاٹا ٹربیونل بحال

فاٹا ٹربیونل بحال، محکمہ داخلہ نے 11 زیرالتواء مقدمات واپس بھیج دیے

ویب ڈیسک: پشاورہائیکورٹ کے حکم پر فاٹا ٹربیونل نے بحالی کے بعد مقدمات کی سماعت شروع کر دی، ذرائع کے مطابق محکمہ داخلہ کی جانب سے فاٹا ٹریبونل کو 11 زیر التواء مقدمات واپس بھیج دیئے گئے، محکمہ داخلہ کے مطابق مقدمات میں ڈاکٹر شکیل آفریدی کیس سمیت دیگر اہم کیسز شامل ہیں، ایف سی آر کے خاتمہ پر 2019 میں فاٹا ٹربیونل ختم کر دیا گیا تھا، ذرائع کے مطابق فاٹا ٹربیونل کے خاتمہ پر تمام کیسز دیگر کورٹس کو منتقل کر دیے گئے تھے، صوبائی محکمہ داخلہ نے کیسز واپس بھجوانے کی وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ عدالتوں پر زیادہ کیسز کا بوجھ بڑھ جانے پر اضلاع کے کیسز التوا کا شکار تھے، فاٹا ٹریبونل کی بحالی کا نوٹیفیکیشن گزشتہ ماہ خیبرپختونخوا حکومت نے کیا تھا اور اس میں گیارہ اہم مقدمات کے زیر التوا ہونے کا بھی ذکر شامل تھا، محکمہ داخلہ ذرائع نے بتایا کہ فاٹا ٹربیونل چیئرمین ذاکر حسین، 2 اراکین خلیل اللہ خلیل اور کفایت اللہ پر مشتمل ہے۔

مزید پڑھیں:  زخمی ڈونلڈ ٹرمپ کنونشن میں شرکت کیلئے پہنچ گئے