بجلی پشاور میں احتجاج

بجلی بلوں میں ظالمانہ ٹیکسز کیخلاف پشاور سمیت ملک بھر میں احتجاج، بل نذر آتش

ملک بھر میں مہنگائی کا طوفان، پٹرول سمیت اشیائے خورد و نوش کی قیمتیں آسمان کو چھونے لگیں جبکہ رہی سہی کسر بجلی کے بھاری بھرکم بلوں نے پوری کر دی، بجلی کے ہیوی بلوں کے خلاف پشاور سمیت ملک بھر میں احتجاج کا سلسلہ جاری، سڑکیں بند، بل نذر آتش کر دیئے گئے۔
ویب ڈیسک: بجلی کی بڑھتی ہوئی قیمتوں اور بے جا ٹیکسز کے خلاف پشاور، اٹک، رحیم یار خان، پاکپتن سمیت ملک بھر میں شہری سڑکوں پر نکل آئے۔ لوگوں نے سڑکیں بند کرنے سمیت بل نذر آتش کر دیئے۔
پشاور میں شہریوں نے احتجاج کرتے ہوئِے ہاتھوں میں پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر واپڈا، پیسکو اور بجلی کے بلوں کے خلاف نعرے درج تھے۔ مظاہرین کا اس موقع پر کہنا تھا کہ بجلی کے بل دیکھ کر ہمارے ہوش اُڑ گئے ہیں۔ مہنگائی، غربت اور بے روزگاری نے عوام کا جینا محال کر دیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بجلی کے بلوں میں بے جا اضافہ اور ٹیکسز کی بھرمار ہے، ان بلوں نے مزدور اور سفید پوش طبقے کو فاقہ کشی پر مجبور کر دیا ہے۔
اٹک میں بجلی کے ہیوی بلوں کے خلاف شہریوں نے احتجاج کرتے ہوئے ریلوے پل سے مرکزی شاہراہ بلاک کر دی جس کے باعث پنجاب اور خیبرپختونخوا جانے والے تمام راستے بند ہوگئے۔
پاکپتن میں شہریوں نے واپڈا کے ظالمانہ ٹیکسز کے خلاف پیر غنی روڈ پر ٹائروں کو آگ لگا کر احتجاج کیا اور بل نذر آتش کر دیئے۔
پشاور میں اضافی بجلی بلوں کے خلاف احتجاج ریکارڈ کرایا گیا، شہر کی معروف شاہین مسلم ٹاون اور ملحقہ علاقوں کے رہائشیوں سمیت پورے شہر میں عوام نے اس سلسلے میں احتجاج کیا اور نعرہ بازی کی، احتجاج کرتے ہوئے مظاہرین نے بجلی کے بل نذر آتش کر دیئے، مظاہرین کا کہنا تھا کہ غیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ اور بلوں میں ٹیکسز کی بھرمار ناقابل برداشت ہے، ملک میں جاری مہنگائی نے عوام کا جینا محال کر دیا ہے۔ رہی سہی کسر بجلی کے بھاری بھرکم بلوں نے پوری کر دی۔ انہوں نے حکومت سے اضافی ٹیکسز فوری ختم کرنے کا مطالبہ کیا۔

مزید پڑھیں:  اسامہ بن لادن کا قریبی ساتھی گرفتار، تفتیش شروع